غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ پر کے الیکٹرک کو توہین عدالت کا نوٹس

46

کراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائیکورٹ نے غیراعلانیہ لوڈ شیڈنگ پر نیپرا اور کے الیکٹرک کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سی او او کے الیکٹرک آصف سعد، ہیڈ آف ڈسٹری بیوشن عامر ضیا، سابق سی ای او کے الیکٹرک طیب ترین کو توہین عدالت کے نوٹس جاری کردیے۔ جسٹس حسن اظہر رضوی کی سربراہی میں بینچ کے روبرو کرامت علی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ پر نیپرا اور کے الیکٹرک کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔ عدالت نے سابق سی ای او کے الیکٹرک طیب ترین، سی او او کے الیکٹرک آصف سعد اور ہیڈ آف ڈسٹری بیوشن عامر ضیا کو توہین عدالت کے نوٹس جاری کردیے۔ عدالت نے کے الیکٹرک حکام کو 31 اکتوبر تک جواب دینے کا حکم دیدیا۔ دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ 22 مئی 2018ء کے عدالتی حکم کی خلاف ورزی جاری ہے۔ کے الیکٹرک اور نیپرا حکام عدالت کے احکامات پر عملدرآمد نہیں کر رہے۔ لوڈشیڈنگ کی وجہ سے ہیٹ ویو میں سیکڑوں شہری جاں بحق ہوئے تھے۔ عدالت نے نیپرا کو کے الیکٹرک کے خلاف کارروائی کی ہدایت کی تھی۔ اب بھی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے جو توہین عدالت کے مترادف ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ