تھر میں گیس کی فراہمی‘سندھ حکومت کا رپورٹ تیار کرنے کا حکم

39

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے ضلع تھرپارکر میں تحصیل کلوئی شہر کو گیس کی فراہمی کے لیے فزیبلٹی رپورٹ تیار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ تاکہ جنگلات کے کٹاوَ کی روک تھام کے ساتھ صحرائے تھر کے قیمتی درختوں کو بھی بچایا جاسکے۔ مراد علی شاہ نے مذکورہ ہدایات پی پی پی رکنِ سندھ اسمبلی سریندر ولاسائی کی درخواست پر محکمہ توانائی کے سیکرٹری کو جاری کیں، جنہوں نے گزشتہ روز ان سے وزیراعلیٰ ہاوَس میں ملاقات کی تھی۔ فزیبلٹی سمیت تمام قانونی لوازمات کے مکمل ہونے اور سوئی سدرن گیس کمپنی کو مذکورہ اسکیم کے لیے فنڈز کی فراہمی کی صورت میں کلوئی ضلع تھرپارکر کا پہلا شہر ہوگا، جسے گیس کی سہولت میسر ہوگی۔ صوبائی وزیراعلیٰ نے کہا کہ تھرپارکر کے دیگر علاقوں کو بھی گیس فراہم کی جائے گی۔ حکومت سندھ نے ضلع تھرپارکر سمیت صوبے کے دیگر اضلاع عمرکوٹ، قمبر شہداد کوٹ اور دادو کے مختلف علاقوں کو آفت زدہ قرار دے کر وہاں سے مختلف محصولات کی وصولی موخر کردی ہے۔ سریندر ولاسائی نے وزیراعلیٰ سے اپیل کی کہ ضلع تھرپارکرمیں 2 لاکھ 67 ہزار خاندانوں کو مفت گندم حاصل کرنے کے لیے لوگ غربت کے باعث اپنے شناختی کارڈ اپڈیٹ نہیں کراسکے۔ لہٰذا شناختی کارڈ کے اجرا کے لیے نادار فیس حکومت سندھ ادا کرے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے ڈپٹی کمشنر تھرپارکر کو ہدایات جاری کی کہ اس ضمن میں ایک پروپوزل بناکر بھیجیں۔ علاوہ ازیں مراد علی شاہ نے بلدیاتی اداروں کو 10 فائر ٹینڈرز اور دنیا کا سب سے بڑا ایک اسنارکل سپرد کرتے ہوئے کہا کہ فائر بریگیڈکی آگ بجھانے کی صلاحیتوں میں اضافہ اور عوام کی جان و مال کی حفاظت کرنا ہمارا فرض ہے۔ یہ بات انہوں نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر میئر کراچی وسیم اختر، وزیر بلدیات سعید غنی، صوبائی مشیر مرتضیٰ وہاب و دیگر حکام بھی موجود تھے۔ وزیراعلیٰ نے ایک اسنارکل اور ایک فائر ٹینڈر کی چابی میئر کراچی کے حوالے کی۔ دیگر فائر ٹینڈرز کی چابیاں متعلقہ ٹاؤن میونسپل افسران کے حوالے کی جس میں میرپورخاص، شہید بے نظیر آباد، سکھر، لاڑکانہ، جیکب آباد کے ٹی ایم او شامل تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ