حیدرآبا د،محکمہ سماجی بہبود کے ملازمین کا تنخواہ کی عدم ادائیگی کیخلاف احتجاج 

49

حیدر آباد (نمائندہ جسارت) محکمہ پاپولیشن ویلفیئر حیدرآباد کے ملازمین کی جانب سے محکمہ پاپولیشن کو محکمہ صحت میں ضم کرنے اور تنخواہیں نہ ملنے کیخلاف حیدر آباد پریس کلب کے سامنے تیسرے روز بھی علامتی بھوک ہڑتال جاری رہی۔ اس موقع پر آل پاکستان کلرک ایسوسی ایشن پاپولیشن یونٹ حیدر آباد کے صدر فرمان بگھیو، ثمینہ لاشاری، نور احمد سولنگی اور شبانہ بلوچ سمیت دیگر نے خطاب کے دوران بتایا کہ حکومت سندھ کی جانب سے محکمہ پاپولیشن ویلفےئر کو ختم کرکے محکمہ صحت میں ضم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اور اس عمل سے محکمہ پاپولیشن کے ملازمین کو ناقابل تلافی نقصان ہوگا، محکمہ پاپولیشن میں 2009ء سے کام کرنے والے کچے ملازمین کو مستقل کرنے کے بجائے انہیں دلاسہ دیا جارہا ہے، جس کی وجہ سے کچے ملازمین کا مستقبل داؤ پر لگا ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سوشل میل موبلائزر 20 سال سے عارضی بنیادوں پر کام کررہے ہیں اور انہیں مستقل نہ کرکے ان کے حقوق پر ڈھاکا ڈالا جارہا ہے، جبکہ محکمہ پاپولیشن کے ملازمین ٹائم اسکیل اور ٹی اے ڈی اے سمیت دیگر سہولیات سے بھی محروم ہیں اور سن کوٹے سمیت فوتی کوٹے پر بھی عملدر آمد نہ ہونے کے سبب ملازمین کی اولاد بے روزگار ہے۔ انہوں نے حکومت سندھ سے مطالبہ کیا کہ محکمہ پاپولیشن کو محکمہ صحت میں ضم کرنے کا فیصلہ واپس لے کر کچے ملازمین کو مستقل کیا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ