جیکب آباد اسمگلروں کی محفوظ پناہ گاہ بن گیا، کسٹم حکام کی خاموشی

62

جیکب آباد (نمائندہ جسارت) جیکب آباد اسمگلروں کی محفوظ پناہ گاہ بن گیا، جیکب آباد کے راستے سندھ بھر سمیت پنجاب میں غیر ملکی سامان کی اسمگلنگ کا سلسلہ جاری، کسٹم حکام نے خاموش۔ جیکب آباد کے راستے سندھ کے مختلف علاقوں سمیت پنجاب میں غیر ملکی سامان کی اسمگلنگ کا سلسلہ جاری ہے، بلوچستان سے جیکب آباد کے راستے غیر ملکی سامان کے ٹرک اور کنٹینر سرعام گزر کر مختلف علاقوں میں پہنچتے ہیں، غیر ملکی سامان کی اسمگلروں نے جیکب آباد کو اپنا ہیڈ کوارٹر بنا لیا ہے جہاں سے وہ اس غیر قانونی کاروبار کوچلا رہے ہیں، معلوم ہوا ہے کہ کسٹم، ڈسٹرکٹ پولیس اور ایکسائز پولیس کی جانب سے سندھ بلوچستان کی سرحدی پٹی پر قائم چیک پوسٹوں سے گزرنے والی ہر گاڑی سے بھتا مقرر ہے جو بھتا دے کر اسمگلروں کو سرعام کاروبار کی اجازت دی گئی ہے، جیکب آباد کے راستے اسمگل ہونے والے سامان میں ایرانی تیل، ڈیزل، گاڑیوں کے اسپیئر پارٹس، موبائل فونز، کمبل، قالین، موبل آئل، بسکٹ، گٹکا، جوس، صرف ، صابن اور شیمپو سمیت ہر قسم کا سامان شامل ہے۔ اس قسم کے غیر ملکی سامان کی ملک بھر میں ہونے والی اسمگلنگ کی وجہ سے معیشت کو ہر روز کروڑوں روپے کا نقصان ہوتا ہے۔ کاروبار میں ملوث بااثر افراد کیخلاف کسی قسم کی کوئی کارروائی نہیں کی جارہی، جن کے تعلقات پولیس، کسٹم، ایکسائز حکام سے ہیں، ان کو ان کا مقررہ بھتا دینے کے بعد کاروبار سرعام چل رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ