پاکستان کی برآمدات میں 23.12 فیصداضافہ ہوا

42

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قیمت میں غیر معمولی اضافے کے باعث رواں مالی سال2018-19 کی پہلی سہ ماہی‘ جولائی تاستمبر2018 کے دوران روپے کے اعتبار سے پاکستان کی برآمدات میں23.12فیصداضافہ ہوا ہے۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے ستمبر2018 کے پہلے ہفتے میں انٹر بینک مارکیٹ میں امریکی ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر10فیصد گرادی تھی جبکہ دسمبر2017 سے اب تک ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدرمجموعی طور پر30فیصد کم ہوئی ہے۔ پہلی سہ ماہی میں زرمبادلہ میں برآمدی آمدنی‘ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے کی 5ارب20کروڑ ڈالر کے مقابلے میں صرف20 کروڑ ڈالر افزائش سے 5ارب 40 کروڑ ڈالر رہی ہے۔ ٹیکسٹائل ماہرین کاکہناہے کہ اگر ویلیو ٹیکسٹائل خصوصاً اپیرل سیکٹر کی کارکردگی شاندار نہ ہوتی ہے مجموعی ملکی برآمدات مثبت کے بجائے منفی ہوتیں۔ سرکاری اعدادوشمار کے مطابق ماہ ستمبر2018 میں برآمدی آمدنی ستمبر2017 کی ایک ارب 66 کروڑ ڈالر کی نسبت ماہ بہ ماہ 3.55فیصد افزائش سے ایک ارب 73کروڑ ڈالر رہی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ