عالمی مندوب کی یمنی فریقین میں مذاکرات بحال کرانے کی کوشش

51

مسقط (انٹرنیشنل ڈیسک) یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفتھ نے ایک بار پھر یمن کے متحارب فریقین کے درمیان بات چیت کی بحالی کی کوششیں شروع کی ہیں۔ دوسری جانب یورپی ملک آسٹریا نے یمنی حکومت اور حوثی باغیوں کے درمیان مذاکرات کے لیے میزبانی کی پیش کش کی ہے۔ مبصرین کے مطابق عالمی کوششوں کے نتیجے میں توقع ہے کہ یمنی فریقین کے درمیان امن بات چیت آیندہ ماہ اقوام متحدہ کی زیرنگرانی دوبارہ ہوگی۔ عرب ٹی وی کے مطابق یمن کے لیے اقوام متحدہ کے ایلچی مارٹن گریفتھ جمعہ کے روز ریاض سے مسقط پہنچے، جہاں انہوں نے وزیر خارجہ یوسف بن علوی سے یمن کے بحران پر تفصیلی بات چیت کی۔ اقوام متحدہ کے مندوب نے مسقط میں موجود حوثیوں کے نمایندوں سے بھی ملاقات کی اور صنعا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کو کھولنے اور اعتماد سازی کے لیے اقدامات کرنے پر بات چیت کی گئی۔ قبل ازیں یو این مندوب نے ریاض میں یمن کے نائب صدر علی محسن الاحمر، وزیراعظم احمد عبید بن دغرسے ملاقات کی تھی۔ دوسری جانب ایک رپورٹ کے مطابق صنعا حوثی ملیشیا کے سائے تلے ایک بڑے سے جیل خانے کا منظر پیش کر رہا ہے۔ یہ بات یمن کے وزیر اطلاعات معمر الاریانی نے جمعرات کے روز کہی۔ انہوں نے حوثی ملیشیا کی جانب سے اپنے زیر قبضہ علاقوں میں کریک ڈاؤن اور شہریوں کو دہشت زدہ کرنے کی کارروائیوں کی سخت مذمت کی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.