انتفاضہ القدس کے دوران اسرائیل نے 615 فلسطینی خواتین کو قید کیا

33

مقبوضہ بیت المقدس انٹرنیشنل ڈیسک) اسرائیلی فوج نے انتفاضہ القدس کے دوران 615 فلسطینی خواتین کو حراست میں لے کر قید کیا۔ ان میں 18سال کم عمر84 کم عمر لڑکیاں بھی شامل تھیں۔اسرائیلی فوج اور پولیس نے سماجی ذرائع ابلاغ کی نگرانی کے لیے کئی سیل قائم کررکھے ہیں۔ اسرائیل کے خلاف کوئی بیان پوسٹ کرنے، اسرائیلی مظالم کو اجاگر کرنے کی پاداش میں فلسطینیوں کو دھر لیا جاتا ہے۔ اسرائیلی فوج سماجی کارکنوں کے خلاف اشتعال انگیزی اور اسرائیلی سلامتی کو خطرے میں ڈالنے کے الزامات کے تحت مقدمات قائم کرتی اور قید و جرمانوں کی سزائیں دی جاتی ہیں۔ دوسری جانب قابض فوج اور انٹیلی جنس اداروں کی طرف سے اسرائیل کی عسقلان جیل میں پابند سلاسل فلسطینی اسیران پر وحشیانہ تشدد کیا گیا۔ فوج کی بھاری نفری نے عسقلان جیل میں گھس کر فلسطینی اسیران کے کمروں میں انہیں تشدد کا نشانہ بنایا۔ اس دوران وارڈ نمبر 3 کے قیدیوں کو ان کے اہل خانہ سے ملاقات سے بھی محروم کر رکھا گیا۔ حال ہی میں اس بیرک میں قید فلسطینیوں کو 300 شیکل تک جرمانے کیے گئے تھے۔
صومالی وزیر اعظم کی سعودی شاہ سے ملاقات‘ اہم معاملات پر گفتگو
ریاض (انٹرنیشنل ڈیسک) افریقی ملک صومالیہ کے وزیراعظم حسن علی خیری نے سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہ سلمان سے ملاقات کی۔ دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات میں دو طرفہ تعلقات، مختلف شعبوں میں تعاون کے فروغ اور علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر سعوی وزیر مملکت ڈاکٹر مساعد بن محمد عیبان، وزیر خارجہ عادل جبیر، جنرل سیکرٹریٹ میں کابینہ کے مشیر احمد خطیب، وزیرمملکت برائے افریقی امور احمد قطان، ڈپٹی انٹیلی جنس چیف احمد عیسری اور دیگر اعلیٰ حکام موجود تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.