ملعونہ آسیہ کو فرار کرانے کی سازش ناکام بنادیں گے،مذہبی جماعتیں

78

کراچی (اسٹاف رپورٹر) مختلف مذہبی جماعتوں کے رہنماؤں نے کہا ہے کہ ایک مرتبہ پھرملعونہ آسیہ مسیح کی سزاختم کرنے یااسے بیرون ملک فرارکرانے کے لیے گراؤنڈ تیار کیا جارہا ہے،اس سے پہلے بھی ایساکرنے کی کوشش کی جاچکی ہے،جس کو عاشقان مصطفےٰؐ کے اتحاد نے ناکام بنادیاتھا،اس مرتبہ بھی کوئی بھول میں نہ رہے ایسی کسی کوشش کو ہرگزبرداشت نہیں کیاجائے گا،ملعونہ آسیہ مسیح اقراری مجرم ہے جواپناجرم خود قبول کرچکی ہے، ملعونہ آسیہ مسیح کو بیر ون ملک فرار کر انے کی سازشوں کو نا کا م بنا دیں گے، پاکستان ومسلم دشمن عناصر کی جانب سے ملعونہ کی ممکنہ رہا ئی کے پر وپیگنڈ ے کی شد ید مذمت کر تے ہیں۔تفصیلات کے مطابق جمعیت علمائے پاکستان (نورانی) کے صوبہ سندھ کے صدر علامہ سید عقیل انجم قادری، علامہ افتخار احمد عباسی، میاں منیر احمد جامی ودیگر نے یوم تحفظ ناموس رسالت کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کارکنان بیدارہیں اگر عدالت عظمیٰ کا فیصلہ خلاف شریعت آیاتو جمعیت علمائے پاکستان ہر سطح پر احتجاج کرے گی ،ارباب اختیاراچھی طرح جان لیں یہ ملک عاشقان مصطفےٰ کا ہے جو اپنی جانوں پر کھیل کر بھی ناموس رسالت کا تحفظ کرنے کا جذبہ رکھتے ہیں۔سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری کی خصوصی ہدایت پر پاکستان سنی تحریک کے تحت جمعۃالمبارک کو یوم حرمت رسول ﷺ کے طور پر منایا گیا ،مساجد میں آسیہ ملعونہ کو پھانسی دینے کیلیے قراردادیں منظور کی گئیں اور عدالت عظمیٰ سے اپیل کی گئی آسیہ ملعونہ کی پھانسی کی سزا کو برقرار رکھا جائے، اس موقع پر ملک بھر کی مساجد میں نماز جمعہ کے خطبے میں خطاب کرتے ہوئے علما کرام ومقررین نے کہا کہ آسیہ ملعونہ گستاخ رسول ہے یہ جے آئی ٹی اور دو عدالتوں کا فیصلہ ہے ،یہود ونصاریٰ حکومت پر دباؤبڑھا کر آسیہ ملعونہ کو رہا کرانا چاہتے ہیں ،حکومت نے آسیہ ملعونہ کو رہا یا بیرون ملک بھیجنے کی کوشش کی تو یہ ملک کے آئین اور شریعت سے غداری ہوگی ۔انہوں نے کہا کہ حکمران بیرونی دباؤ میں نہ آئیں، ملک کے عوام حکومت کے ساتھ کھڑے ہیں ،آسیہ ملعونہ کو رہا کردیا گیا تو پھر ہر گستاخی کرنے والا بیرون ممالک کی نیشنلٹی حاصل کرنے کی کوشش کرے گا ،دین اسلام ہمیں حرمت رسول ﷺ کے تحفظ کیلیے تن من دھن سب کی قربان کرنے کا درس دیتا ہے ،گستاخ رسول کی دین اسلام میں سزا صرف موت ہے اور پاکستان کے آئین میں بھی گستاخ رسول کی سزا موت ہے ۔علاوہ ازیں مرکزی صدراہلسنّت والجماعت پاکستان علامہ اورنگزیب فاروقی ، علامہ رب نوازحنفی ،علامہ تاج محمدحنفی اوردیگرنے ہنگامی اجلاس کے بعد جاری بیان میں کہا ہے کہ سابق عدالتی فیصلے پرعملدرآمدکرتے ہوئے ملعونہ کوفوری پھانسی کے پھندے پرلٹکادیاجائے ،ریاست مدینہ کے داعی حکمران وزیر اعظم عمران خان ریاست مدینہ کے بانی امام الانبیاء ؐکے ناموس کے تحفظ کے معاملے پرکسی لچک اورکمزوری کامظاہرہ نہ کریں،بصورت دیگردنیاوآخرت میں تباہی کے سوا کچھ حاصل نہ ہوگا۔قائدین اہلسنّت نے کہاکہ ملعونہ آسیہ مسیح کو بیر ون ملک فرار کر انے کی کسی بھی ممکنہ سازشوں کو ناکا م بنا دیں گے، پاکستان ومسلم دشمن عناصر کی جانب سے ملعونہ کی ممکنہ رہا ئی کے پروپیگنڈے کی شد ید مذمت کر تے ہیں، پاکستان اسلام کے نا م پر بنا ہے، یہاں حضو ر اکرمؐ کی شان میں ذرا بھر بھی گستاخی نا قابل برداشت ہے۔ملعونہ کی سز ائے مو ت پر عملد ر آمد میں تا خیر ی حر بے سے پاکستانی مسلما نو ں میں تشو یش اور سخت اشتعال پا یا جا رہا جو کسی بھی وقت آتش فشاں بن کر پھٹ سکتا ہے۔مزید برآں جما عت اہلسنّت پاکستان کراچی کے امیرعلامہ شاہ عبد الحق قادری نے کہا کہ نبی کریم ؐکی ناموس کی حفا ظت ہمارے ایمان کا حصہ ہے جس پر کوئی مصالحت نہیں ہو سکتی۔ مسلمان کو اپنے نبی ؐ کی شان میں گستاخی ہر گز برداشت نہیں۔ انہوں نے میمن مسجد میں جمعہ کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ توہین رسالت کے مرتکبین کی سزاؤں پر عمل کے بجائے ممکنہ ریلیف دینا اشتعال کا سبب بن سکتا ہے۔حکمرانوں کو ہمارا مشورہ ہے کہ وہ شرعی سزاؤں میں تبدیلی اور ملعونہ آسیہ کو محفوظ راستہ دینے کا ہر گز نہ سوچیں یہ ان کے لیے نقصان دہ ہو ثابت ہو سکتا ہے۔نیز آسیہ ملعونہ کیس کے حوالے سے جما عت اہلسنّت کراچی کے عہدیداران کا ہنگامی اجلاس ناظم کراچی عبد الحفیظ معارفی کی زیر صدارت مرکز جماعت اہلسنّت جامع شہدا میلاد لائنز ایریا میں منعقد ہوا۔اجلاس کے مشترکہ اعلامیہ میں رہنماؤں نے کہا کہ ناموس رسالت کا تحفظ عین ایمان ہے، اس پر کوئی سمجھوتا نہیں ہو سکتا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ