کوئٹہ: پولیس اہلکار قتل، 3 افراد کی گولیوں سے چھلنی لاشیں برآمد

33

کوئٹہ (نمائندہ جسارت) کوئٹہ میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے پولیس اہلکار جاں بحق، ہرنائی اور سکندر آباد سے 3 افراد کی گولیوں سے چھلنی لاشیں ملیں، چمن کے علاقے سے اغوا ڈاکٹر لیویز نے بازیاب کرالیا۔ پولیس کے مطابق کوئٹہ کے علاقے طوغی روڈ پر نامعلوم افراد نے گولیاں مار کر 24 سالہ اظہر حسین کو سر میں گولی مار کر قتل کردیا اور فرار ہوگئے۔ مقتول ریٹائرڈ پولیس اہلکار کا بیٹا اور حال ہی میں پولیس میں بھرتی ہوا تھا اور 13 اکتوبر کو جوائننگ دینا تھی۔ ادھر ہرنائی کے پہاڑی علاقے شاہرگ سے ایف سی کو 2 افراد کی لاشیں ملی ہیں جنہیں سینے میں گولیاں مار کر قتل کیا گیا ہے۔ لیویز کا کہنا ہے کہ لاشیں 3 سے 4 روز پرانی ہیں۔ دونوں افراد کی عمریں 40 سال کے لگ بھگ ہیں تاہم ان کی شناخت نہیں ہوسکی۔ دریں اثناء ضلع سکندرآباد(سوراب) کے علاقے ڈیم ایریا انجیرہ سے بھی ایک شخص کی لاش ملی ہے جسے گولیاں مار کر قتل کیا گیا۔ مقتول کی شناخت محمد اسحاق ولد محمد مینگل کے نام سے ہوئی ہے۔ علاوہ ازیں پاک افغان سرحدی شہر چمن کے علاقے قندھاری بازار سے اغوا ہونے والے ڈاکٹر محمد انور کو لیویز نے بروقت اطلاع ملنے پر بازیاب کرالیا۔ 2 اغوا کاروں محمود اور عبدالرحمان کو بھی گرفتار کرلیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.