حیدر آباد، سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے عارضی ملازمین کا احتجاج

57

حیدر آباد (نمائندہ جسارت) سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی حیدر آباد ریجن کے عارضی ملازمین نے گزشتہ کئی سال سے مستقل نہ کیے جانے کیخلاف حیدر آباد پریس کلب کے سامنے چوتھے روز بھی احتجاج جاری رکھا اور انتظامیہ کیخلاف سخت نعرے بازی کی۔ اس موقع پر اعجاز کھوسو، گڈو قنبرانی اور ضیاالدین قاضی سمیت دیگر ملازمین نے بتایا کہ وہ گزشتہ کئی سال سے سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی میں عارضی ملازمین کے طور پر کام کررہے ہیں لیکن ہمیں اب تک مستقل نہیں کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ سہون ڈیولپمنٹ اتھارٹی جامشورو میں تقریباً 380 عارضی ملازمین کو مستقل کردیا گیا ہے لیکن سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی حیدر آباد کے ملازمین کو صرف دلاسے دیے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ صوبائی وزیر بلدیات آغا سراج درانی اور سابقہ ڈی جی منظور قادر نے دورہ حیدر آباد کے موقع پر ملازمین سے وعدہ کیا تھا کہ انہیں جلد مستقل کردیا جائے گا اور ایک کمیٹی بنائی گئی لیکن وہ کمیٹی بھی کاغذی ثابت ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنے پر ملازمین کو نوکریوں سے نکالنے کی دھمکیاں دی جارہی ہیں جو کہ ملازمین کے ساتھ ناانصافی ہے۔ انہوں نے پیپلز پارٹی کے چےئرمین بلاول زرداری، وزیر اعلیٰ سندھ اور صوبائی وزیر بلدیات سے اپیل کی کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے عارضی ملازمین کو مستقل کیا جائے دوسری صورت میں سخت احتجاج کیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ