دہشت گردی کا خطرہ‘ بھارتی سیکورٹی فورسز کے مسکرانے پر پابندی

114

نئی دہلی (انٹرنیشنل ڈیسک) بھارت میں ہوائی اڈوں پر تعینات سیکورٹی حکام سے کہا گیاہے کہ وہ زیادہ مسکرانے سے گریز کریں، کیوں کہ اس سے سیکورٹی کے مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔ مقامی ذرائع کے مطابق حکام کو خدشات ہیں کہ ضرورت سے زیادہ خوش اخلاقی کی وجہ سے دہشت گرد حملوں کا خطرہ لاحق ہو سکتا ہے۔اس سے دہشت گرد خود کو مطمئن کرلیتے ہیں۔ عملے کودوستانہ ہونے کے بجائے زیادہ چوکنا ہونا چاہیے۔ سیکورٹی اہل کاروں پر اب بہت زیادہ مسکراہٹ سے مناسب حد تک مسکرانے کا طریق کار نافذ ہو گا۔ سینٹرل انڈسٹریل سیکورٹی فورس کے ڈائریکٹر جنرل راجیش رانجن نے تو یہاں تک کہا کہ امریکامیں نائن الیون حملوں کی وجہ مسافروں سے ضرورت سے زیادہ اچھے رویے کی پالیسیاں تھیں۔ واضح رہے کہ بھارت میں ایسا پہلی بار نہیں ہوا کہ اہل کاروں کو اپنے معیار میں بہتری کے لیے کہا گیا ہے۔ جولائی میںکرناٹک ریزرو پولیس نے اپنے اہل کاروں سے کہا تھا کہ وہ وزن کم کریں، بصورت دیگرانہیں معطل کر دیا جائے گا۔ اسی طرح 2004 ء میں مدھیہ پردیش میں پولیس ااہل کاروں سے کہا گیا تھا کہ انہیں مونچھیں بڑھانے کے لیے معاوضہ دیا جائے گا، کیوں کہ ایسا کرنے سے انہیں زیادہ عزت ملے گی۔ واضح رہے کہ بھارت میں مسکرانے پر پابندی عائد کی جارہی ہے، جب کہ پڑوسی ملک نیپال میں 2014 ء میں 600 افراد کو صرف اس مقصد کے لیے بھرتی کیا گیا تھاکہ وہ پولیس افسران کو زیادہ دوستانہ بنانے میں مدد دے سکیں۔
مسکرانے پر پابندی

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.