اسرائیلی پہرے میں مزید 129 یہود قبلہ اول میں داخل

32

مقبوضہ بیت المقدس (انٹرنیشنل ڈیسک) یہودی شرپسندوں کی طرف سے آئے روز قبلہ اول پر دھاوؤں میں تیزی آگئی۔ گزشتہ روز 129 یہودی شرپسندوں نے مسجد اقصیٰ میں داخل ہو کر اشتعال انگیز حرکتیں کیں۔ دھاوا بولنے والے یہودی اشرار میں کئی یہودی طلبہ شامل تھے۔ وہ مسجد اقصیٰ کے مراکشی دروازے کے راستے صبح اور شام کے اوقات میں اندر داخل ہوئے اور مذہبی رسومات کی ادائیگی کی آڑ میں قبلہ اول کی بے حرمتی کرتے رہے۔ واضح رہے کہ مسجد اقصیٰ کا باب مغاربہ 1967ء کے بعد قابض صہیونیوں کے نرغے میں ہے اور یہودی اسی دروازے کو قبلہ اول میں داخل ہونے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ گزشتہ
ماہ5ہزار 200 یہودی شرپسندوں نے مسجد اقصیٰ میں داخل ہو کر مسلمانوں کے تاریخی مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔اس موقع پر یہودی عورتیں اور بچے بھی مسجد میں آئے جنہیں پولیس کی طرف سے فول پروف سیکورٹی مہیا کی گئی۔شرپسند 3گھنٹے صبح اور 3گھنٹے شام قبلہ اول میں داخل ہوکر مذہبی رسومات کی ادائیگی کی آڑ میں مقدس مقام کی بے حرمتی کرتے ہیں، جب کہ اس دوران مسلمانوں کا وہاں داخلہ بند رہتا ہے۔ اگست کے دوران 2ہزار 841 یہودی آباد کاروں نے مسجد اقصیٰ میں اشتعال انگیز حرکتیں کیں۔
قبلہ اول/یہود داخل

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.