حکومت پگڑی سسٹم کے متاثرین کو انصاف فراہم کرے،محمودحامد

43

کراچی(اسٹاف رپورٹر)آل پاکستان آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کراچی کے صدر اور پاکستان اسمال پرنٹنگ پریس ایسوسی ایشن کے بانی محمود حامد نے مطالبہ کیا ہے کہ گڈول (پگڑی سسٹم )کے تحت بیٹھے کرایے داروں کے خلاف غیر قانونی ہتھکنڈوں کا استعمال بند کیا جائے اور انہیں بے روزگار اور بے گھر ہونے سے سے بچایا جائے ۔ہم چیف جسٹس پاکستان ، وزیر اعظم ، صدر ،وزیر اعلیٰ ، گورنر سندھ اورتمام سیاسی رہنماؤں کو کراچی میں جاری اس ظلم سے آگاہ کریں گے اور بے روز گار اور بے گھر افراد کی بحالی تک چین سے نہیں بیٹھیں گے ۔ وہ جمعرات کے روز پاکستان اسمال پرنٹنگ پریس ایسوسی ایشن کے زیر اہتمام پاکستان چوک پر متاثرین کے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے ۔ اجلا س سے اسمال ٹریڈرز کے رہنما عثمان شریف ، پرنٹنگ پریس ایسوسی ایشن کے صدر وکیل الدین ، عثمان نعیم ، محمد عرفان نعیم ، محمد عظیم ، ذکی الدین اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔اسمال ٹریڈرز کے صدر نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان ایک کروڑ افراد کو روزگار اور 50لاکھ افراد کو گھر دینے کا اعلان کر رہے ہیں مگر ملک کے سب سے بڑے شہر میں مفاد پرستوں کا ایک ٹولہ سازشوں اور قانونی موشگافیوں کے ذریعے 60اور 70سال سے بیٹھے کرایے داروں کو بے دخل کر رہا ہے۔جس کے لیے وہ تمام غیر قانونی ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اولڈ سٹی ایریا میں 80فیصد بلڈنگ گڈول پر ہیں ۔60/50سال پہلے جس کرایے دار نے 5تا 10ہزار روپے دے کر پگڑی پر جگہ حاصل کی تھی اس سے کروڑوں روپے طلب کیے جا رہے ہیں جسے ہم برداشت نہیں کر یں گے اور اس مافیا کی غنڈہ گردی کا مقابلہ کریں گے ۔انہوں نے ریلیف کمیٹی فار گڈول ٹینیٹس کے قیام کا بھی اعلان کیا ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ