سمن آباد میں بچے کی موت اسکول مالکان کی غفلت کا نتیجہ نکلی

62

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) سمن آباداسکول میں بچے کی موت اسکول مالکان کی غفلت کا نتیجہ نکلی ،تفصیلات کے مطابق سمن آباد اسکول کی چھت سے گیارہ سالہ حبیب اللہ کی مبینہ خودکشی کا معاملہ، تحقیقاتی کمیٹی نے اسکول مالکان کے خلاف رپورٹ تیار کرلی۔حبیب اللہ کی جان اسکول مالکان کی غفلت اور لاپروائی کی وجہ سے گئی،تفتیشی ذرائع کے مطابق اسکول میں قدم قدم پر قواعد و ضوابط کی دھجیاں اڑائی گئیں،چھت پر غیرقانونی طور پر کلاس روم تعمیر کیے گئے،ایک جانب ٹین کی چھتوں والے کمرے دوسری جانب زیرتعمیر دیواریں تھیں۔ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی رولز کی بھی خلاف ورزی کی گئی،ایس بی سی اے کو پتا چلتا تو وہ ویسے ہی یہ کلاس رومز ڈیمالیش کر جاتے، پورے اسکول میں صرف مرکزی دروازے اور گلی میں کیمرہ لگایا گیا،اسکول مالکان نے نہ سیکورٹی پر دھیان دیا نہ حفاظتی اقدامات پر۔تفتیشی حکام کا کہنا ہے کہ بچے کے حوالے سے ابھی تک کوئی عینی شاہد نہیں ملا جو گواہی دے سکے، ایس پی لیاقت آباد رپورٹ تیار کر رہے ہیں، جلد بالا حکام کو ارسال کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ