کراچی‘ اومنی گروپ کے دفتر پر ایک گھنٹے میں 2 چھاپے‘ اہم شواہد مل گئے

45

کراچی (اسٹا ف رپورٹر) کراچی میں اومنی گروپ کے دفتر پر ایک گھنٹے میں 2 چھاپے مارے گئے‘ اہم شواہد مل گئے۔ تفتیش میں اہم پیش رفت اور تحقیقاتی دائرہ وسیع ہونے کے بعد سندھ کی ایک اہم شخصیت کی جلد گرفتاری کے امکانات بڑھ گئے۔ ذرائع کے مطابق ایف آئی اے ٹیم کو انور مجید کے دفتر سے کچھ ایسی دستاویزات بھی ملی ہیں جن میں رقوم بیرون ملک بھیجے جانے کے شواہد موجود ہیں۔ ذرائع کے مطابق آئندہ 2 سے4 ہفتے میں سندھ سے اہم شخصیات کی گرفتاریوں کا سلسلہ شروع کر دیا جائے گا۔ ایف آئی اے کے ایک اور ذر یعے کے مطابق کراچی میں ہاکی اسٹیڈیم کے قریب اومنی گروپ کے دفتر پر ایک گھنٹے میں 2 چھاپے مارے گئے۔ ایک گھنٹے کے دوران نیب اور رینجرز کی2 ٹیموں نے چھاپے مارے‘ دوسری ٹیم نے ملازمین کو حراست میں لے کر باقی ماندہ ریکارڈ بھی قبضے میں لے لیا اوردفتر کو سیل کر دیا۔ ایف آئی اے حکام نے قانون نافذ کرنے والے ادارے کے افسران کے ساتھ اومنی گروپ کے 3ملازمین سے پوچھ گچھ کی‘ ریکارڈ کے ہمراہ 2 کمپیوٹر کے سی پی یو اور3 لیپ ٹاپ بھی قبضے میں لے لیے۔ چھاپے کے دوران سی سی ٹی وی کیمروں کا ریکارڈ بھی تحویل میں لیا گیا‘ ایف آئی اے حکام کے ہمراہ عدالتی حکم پر بنائی گئی جے آئی ٹی کے ارکان بھی تھے۔ ایف آئی اے ٹیم نے اومنی گروپ کے چیف فنانس افسر اسلم مسعود اور اکاؤنٹنٹ عارف خان کے کمروں کی تلاشی لی اور ان کے کمپیوٹر اور کمروں میں موجود اہم دستاویزات ضبط کرلیں۔ قبضے میں لیے گئے ریکارڈ کی فارنسک جانچ نئے مقدمات قائم کرنے میں معاون ثابت ہوگی۔ ایف آئی اے ذرائع نے بتایا کہ 29 بینک اکاؤنٹس سے شروع ہونے والی تحقیقات میں300 سے زاید نئے اکاؤنٹس سامنے آئے ہیں اور ان افراد کو جے آئی ٹی کے توسط سے ایف آئی اے حکام نوٹسز کے ذریعے طلب کر رہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ