بی آر ٹی، بلو لائنز، لیاری ایکسپریس وے کے کام کو تیز کرنے کی ہدایت

30

کراچی (اسٹاف رپورٹر) 26 ویں پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ پالیسی بورڈ کا اجلاس بدھ کو وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت منعقد ہوا جس میں انہوں نے بی آر ٹی، یلو اور بلو لائنز، لیاری ایکسپریس وے کے کام کو تیز کرنے کی ہدایت جبکہ کے فور پروجیکٹ کے لیے50 میگاواٹ کے پاور پلانٹ لگانے کے حوالے سے اہم فیصلے کیے۔ اجلاس میں صوبائی وزرا، سعید غنی، امتیاز شیخ ، ناصر شاہ، وزیر اعلیٰ سندھ کے مشیر مرتضیٰ وہاب، چیف سیکرٹری ممتاز شاہ، متعلقہ صوبائی سیکرٹریز اور پی پی پی یونٹ کے ہیڈ خالد شیخ اور دیگر نے شرکت کی۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ محکمہ ٹرانسپورٹ اینڈ ماس ٹرانزٹ (ٹی ایم ٹی ڈی) نے پی پی پی موڈ کے تحت بین الا قوامی مسابقتی نیلامی کے عمل کے ذریعے بس ریپڈ ٹرانزٹ سسٹم (بی آر ٹی ایس) اور یلو لائن منصوبہ شروع کیا۔ ایک چائنیزفرم اور ٹی ایم ٹی ڈی نے 9 ستمبر2016 ء کو یلو لائن منصوبے کے لیے ایک مراعاتی معاہدے پر دستخط کیے۔ چائنیز فرم نے چائنیز بینک سے فنانسنگ بڑھانے کی کوشش کی مگر وہ ناکام رہا‘ جس کی وجہ سے منصوبے میں تاخیر ہوئی۔ گریٹر کراچی سیوریج پلان (ایس تھری) نکاسی آب کے مسائل کے تدارک کے لیے شروع کیا جا رہا ہے۔ دھابیجی پمپنگ کمپلیکس کراچی کی اپ گریڈ کے نتیجے میں 70 ایم سی جی ڈی اضافی پانی کراچی کو فراہم ہوسکے گا۔ پالیسی بورڈ نے 50 میگا واٹ کے فور پروجیکٹ کے لیے گھریلو گیس پرائسنگ اسٹرکچر پر مطلوبہ گیس مختص کرنے کے لیے وفاقی حکومت سے منظوری اور رابطہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ