گستاخ رسول کی سزامیں حکومت مداہنت سے کام نہ لے،عبدالحق 

28

کراچی (اسٹاف رپورٹر )جما عت اہلسنّت پاکستان کراچی کے امیرعلامہ شاہ عبد الحق قادری نے کہا کہ ہر گستاخ رسول کو سزائے موت ہونی چاہیے۔ حکومت کو مداہنت سے کام نہیں لینا چاہیے۔آسیہ کا کیس پاکستانی قوم کا امتحان ہے اگر اس کو رہائی دیکر بھگا دیا گیا تو قوم کا اعتماد عدالتوں سے اٹھ جائے گا اور آئندہ ایسے کیس عدالتوں میں جانے کے بجائے موقع پر نمٹائے جائیں گے۔ اللہ پاکستان کو سلامت رکھے اور ہمارے حکمرانوں، ججوں اور وکلاء کو حق پر قائم رہنے کی توفیق دے۔انہوں نے کہا کہ ہر فوجداری مقدمہ میں دراصل مدعی حکومت ہوتی ہے۔ ملعونہ آسیہ کا کیس فوجداری ہے جو کہ سیشن کورٹ اور ہائی کورٹ سے حکومت جیت چکی ہے۔ تمام عاشقان رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم بھی اس کیس میں قلبی طور پر فریق ہیں۔ دونوں چھوٹی عدالتوں سے سرخرو ہو چکے ہیں۔عدالت عظمیٰ سے بادی النظر میں اس کا بچنا مشکل ہے۔ تاھم اگر وہ بری ہو جاتی ہے تو اس کا یہ واضح مطلب ہو گا کہ حکومت اور اٹارنی جنرل نے اپنی ذمہیداری کما حقہ پوری نہیں کی۔ چونکہ اس مقدمے کی حقیقی مدعی حکومت ہے لہٰذا اگر خدانخواستہ آسیہ کو بریت مل جاتی ہے تو حکومت کو چاہیے کہ کہ از خود ریویو میں جائے۔بصورت دیگر اہلسنت کو خود آگے بڑھ کر ریویو میں جانا ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ