سانحہ بلدیہ شکاگو سے بڑا سانحہ ہے ‘این ایل ایف

72

کراچی(پ ر)نیشنل لیبرفیڈریشن پاکستان کے تحت سانحہ بلدیہ کے متاثرین کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلیے 15اکتوبر کو ملک بھر میںیوم احتجاج منایا جا رہا ہے ۔این ایل ایف کے تحت اسلام آباد ،لاہور کراچی ،پشاور ،کوئٹہ، سکھر، حیدر آباد، ڈیرہ غازی خان،سیالکوٹ،فیصل آباد،گجروانوالہ،جیکب آباد و دیگر شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے۔ کراچی پریس کلب پر بڑے احتجاجی مظاہر ے سے این ایل ایف کے مرکزی صدر رانا محمود علی خان ،لاہور میں حافظ سلمان بٹ،اسلام آباد میں ڈاکٹر تہذیب الحسن،پشاور میں تلہ خان،کوئٹہ میں عبدالرحیم میر داد خیل،سکھر میں سید نظام الدین شاہ خطاب کرینگے ۔این ایل ایف پاکستان کے مرکزی صدر رانا محمود علی خان نے کہا کہ سانحہ بلدیہ شکاگو سے بڑا سانحہ ہے جس دن دہشت گردوں نے بھتانے دینے پرظلم اور سفاکیت کی انتہا کرتے ہوئے259غریب محنت کشوں کو زندہ جلا کر راکھ کر دیا تھا۔اپنے جہیزکیلیے نوکریاں کرنے والی غریب بچیاں ہاتھوں میں مہندی لگانے کے خواب لیے راکھ کاڈھیر بن گئیں۔ بوڑھے ماں باپ سے ان کے جوان بیٹے اور سہاگنوں سے ان کا دوپٹہ چھین لیا گیاقاتل اور ان کے سرپرست آزاد ہیں۔ حکومت قاتلوں اور ان کے سرپرستوں کو تختہ دار پر لٹکائے اور انہیں نشان عبرت بنایا جائے ۔ستمبر2012ء سے آج چھ سال کا طویل عرصہ گزر چکا ہے لیکن آج تک سانحہ بلدیہ کے متاثرین انصاف کیلیے دربد ر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔ بیرونی ممالک سے ساٹھ کروڑکی آنے والی رقم پر این جی اوز قابض ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ