بیانیہ ایک نہ ہو تو قوم ترقی نہیں کر سکتی، شاداب احسانی

34

کراچی (اسٹاف رپورٹر) ادارہ پاکستانی بیانیہ پاکستان کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر ذوالقرنین احمد شاداب احسانی نے کہا ہے کہ جس قوم کا بیانیہ ایک نہ ہو وہ قوم کبھی ترقی نہیں کر سکتی، اگر بیانیہ ایک نہ کیا گیا تو ہم تقسیم در تقسیم ہوتے جائیں گے، ایک بیانیے سے نہ صرف کرپشن میں کمی آئے گی بلکہ اس کے اثرات سیاست اور معیشت پر بھی مثبت مرتب ہوں گے۔ وہ بد ھ کو پر یس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر معروف ماہر لسان رضوان صدیقی، کراچی پریس کلب کے صدر احمد خان ملک، جنرل سیکرٹری مقصود احمد یوسفی، سابق سیکرٹری پریس کلب علا الدین خانزادہ اور سینئر صحافی راشد عز یز بھی موجود تھے۔ پروفیسر شاداب احسانی کا مزید کہنا تھا کہ بیانیہ ایک نہ ہونے سے غربت میں بھی روز بروز اضافہ ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ معاملہ جب بیانیے کا ہو تو زبان ایک ہونے کے باوجود بیانیے میں اختلاف ہوسکتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ’’ادارہ پاکستانی بیانیہ، پاکستان،، کی نوعیت ایک ایسے تھنک ٹینک کی ہے جو تمام پاکستانیوں اور بالخصوص ارباب اختیار کی توجہ اس جانب مبذول کرانا چاہتا ہے کہ پاکستانی جملہ زبانیں پاکستانی بیانیے کی حامل ہو جائیں۔اختتامی کلمات میں صدر پریس کلب احمد خان ملک کا کہنا تھا کہ قوم کے مستقبل کے لیے ہمارا قومی بیانیہ ہونا ضروری ہے اور اس کا جائزہ لیا جانا چاہیے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ