افغانستان میں انتخابی مہم کے دوران خودکش حملہ امیدوار سمیت 8 ہلاک

130

کابل (صباح نیوز) افغانستان میں خود کش حملے میں انتخابی امیدوار سمیت 8 افراد ہلاک ہو گئے۔جبکہ افغان حکومت نے ایک بم دھماکے میں 5طالبان کی ہلاکت کا دعویٰ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق صوبہ ہلمند کے گورنر کے ترجمان عمر ژھاک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ حملہ آور نے افغانستان کے جنوبی شہر لشکر گاہ میں صالح محمد آسکزئی کی انتخابی مہم کے دفتر میں خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے نتیجے میں امیدوار سمیت 8 افراد ہلاک اور 11 زخمی بھی ہوئے۔ نوجوان صلاح پہلی مرتبہ انتخابات میں کھڑے ہوئے تھے اور انہوں نے الیکشن کے دوران ‘مثبت تبدیلی’ کا نعرہ لگایا تھا۔ ابھی تک کسی نے بھی اس حملے کی ذمے داری قبول نہیں کی۔ صدر اشرف غنی نے حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ افغان عوام جمہوریت پر یقین رکھتے ہیں اور دہشت گردوں کو انتخابی عمل کو روکنے نہیں دیں گے۔ 20اکتوبر کو ہونے والے انتخابات میں ڈھائی ہزار سے زائد امیدوار حصہ لیں گے لیکن انتخابات کے قریب آتے ہی ہر گزرتے دن کے ساتھ پرتشدد واقعات کا خطرہ بڑھتا جا رہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ