۔2امریکی محققین نے معیشت کا نوبل انعام حاصل کرلیا

74
اسٹاک ہوم: معیشت کا نوبل انعام حاصل کرنے والے امریکی ماہرین کے ناموں کا اعلان کیا جارہا ہے
اسٹاک ہوم: معیشت کا نوبل انعام حاصل کرنے والے امریکی ماہرین کے ناموں کا اعلان کیا جارہا ہے

اسٹاک ہوم (انٹرنیشنل ڈیسک) رواں برس کا نوبل انعام برائے معاشیات 2 امریکی ماہرین ولیم نورڈ ہاؤس اور پاؤل رومر کے نام کردیا گیا۔ انہیں یہ انعام ماحولیاتی تبدیلیوں، ٹیکنالوجی اور اقتصادی نمو کے درمیان تعلق کے حوالے سے ایک تحقیق پر دیا جارہا ہے۔ سوئیڈش رائل اکیڈمی کے بیان میں بتایا گیا کہ نارڈ ہاؤس اور رومر کی تحقیق نے ماحولیاتی تبدیلیوں اور تکنیکی جدت کے تناظر میں پائیدار اقتصادی ترقی کو بہتر طور پر سمجھنے میں نمایاں کردار ادا کیا ہے۔ پروفیسر نارڈ ہاؤس ییل یونیورسٹی، جب کہ رومر نیو یارک کے اسٹیرن یونیورسٹی آف بزنس سے وابستہ ہیں۔ نوبل انعام کے ساتھ دونوں محققین کو 90لاکھ سوئیڈش کرونن بھی دیے جائیں گے، جو 8لاکھ 70ہزار یورو بنتے ہیں۔ واضح رہے کہ معاشیات کا یہ انعام ان 5 میدانوں میں دیے جانے والے نوبل انعامات میں شامل نہیں ہے، جو الفریڈ نوبل کی وصیت کے مطابق دیے جاتے ہیں۔ ڈائنامائٹ کے موجد الفریڈ نوبل نے طب، طبیعیات، امن، کیمیا اور ادب کے میدانوں میں نمایاں کارکردگی دکھانے والوں میں نوبل انعام تقسیم کرنے کی وصیت کی تھی۔ اسی لیے اقتصادی شعبے میں دیے جانے والے نوبل انعام کونوبل میموریل پرائز ان اکنامک سائنسس کہا جاتا ہے۔ 1969ء سے نوبل انعام برائے اقتصادیات دینے کا سلسلہ شروع کیا گیا تھا اور اب تک سب سے زیادہ امریکی محققین اسے حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ گزشتہ برس امریکی ماہر معیشت رچرڈ تھالر کو اقتصادی نفسیات کے شعبے میں ان کی تحقیق پر نوبل انعام کا حق دار ٹھہرایا گیا تھا۔ چند دنوں کے دوران طب، طبیعات اور کیمیا کے شعبوں میں نوبل انعامات حاصل کرنے والوں کے اعلان سامنے آ چکے ہیں۔ روایتی طور پر نوبل انعامات 10 دسمبر کو الفریڈ نوبل کے یوم وفات کو موقع پر باقاعدہ طور پر دیے جاتے ہیں۔
معیشت نوبل انعام

Print Friendly, PDF & Email
حصہ