مقبوضہ بیت المقدس سے اسرائیلی فوج نے 19 فلسطینیوں کو حراست میں لے لیا

54
غزہ: ساحلی پٹی پر احتجاج کے دوران فلسطینی نماز ادا کررہے ہیں‘ چھوٹی تصویر میں مظاہرین کو اسرائیلی آنسوگیس سے بچتے دیکھا جاسکتا ہے
غزہ: ساحلی پٹی پر احتجاج کے دوران فلسطینی نماز ادا کررہے ہیں‘ چھوٹی تصویر میں مظاہرین کو اسرائیلی آنسوگیس سے بچتے دیکھا جاسکتا ہے

مقبوضہ بیت المقدس (انٹرنیشنل ڈیسک) اسرائیلی فوجی نے مقبوضہ علاقے سے 19 فلسطینیوں کو گرفتار کرلیا۔ اسرائیلی فوج کے مطابق دریائے اردن کے بعض علاقوں میں فوج نے چھاپامار کاروائی کرتے ہوئے دہشت گردی کے شہبے میں فلسطینیوں کو تفتیش کے لیے گرفتار کیا۔ مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج مقبوضہ علاقوں میں آئے دن پوچھ گچھ کا بہانہ بنا کر فلسطینیوں کو پکڑ کر لے جاتی ہے۔ اس وقت مختلف اسرائیلی جیلوں میں 6 ہزار فلسطینی بند ہیں، جن کی گرفتاری مشکوک ہے۔دوسری جانب اسرائیلی حکام کی جانب سے نام نہاد سیکورٹی وجوہات کی آڑ میں فلسطینی شہریوں کے بیرون ملک سفری پابندیوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے۔ گزشتہ ہفتے کے دوران صہیونی حکام نے 8 فلسطینیوں کو بیرون ملک سفر سے روک دیا۔ تمام فلسطینیوں کو غرب اردن کی واحد بین الاقوامی گزرگاہ کرامہ پر روکا گیا۔ فلسطینی پولیس کا کہنا تھا کہ کاغذات اور سفری دستاویزات مکمل ہونے کے باوجود اسرائیلی حکام نے کرامہ گزرگاہ سے اردن داخل ہونے والے کئی فلسطینیوں کو بیرون ملک جانے سے روک دیا۔ ان میں سے بعض شہریوں کو یہ بھی نہیں بتایا گیا کہ انہیں سفر سے کیوں روکا گیا۔ ایک ہفتے کے دوران 3ہزار 151 فلسطینیوں کو گزرنے کی اجازت دی گئی۔ اس دوران صہیونی فوجیوں نے دسیوں فلسطینیوں کومشتبہ قرار دے کر گرفتار بھی کیا۔
فلسطینی حراست میں

Print Friendly, PDF & Email
حصہ