ٹنڈو الہٰیار، بجلی، گیس اور پانی کی عدم فراہمی کے باعث شہری پریشان

43
ٹنڈومحمد خان ،پیپلزکالونی کے رہائشی پولیس کے خلاف پریس کلب کے سامنے احتجاج کررہے ہیں
ٹنڈومحمد خان ،پیپلزکالونی کے رہائشی پولیس کے خلاف پریس کلب کے سامنے احتجاج کررہے ہیں

ٹنڈوالٰہیار(نمائندہ جسارت)یوسی مسن بنیادی سہولیات سے محروم، میٹھا پانی نہ ہونا، روڑ اکھڑے ہوئے اور گیس ہوتے ہوئے مسن کے شہری گیس کی لوڈشیڈنگ کے عذاب میں مبتلا ہیں۔ اس موقع پر مسن کے شہریوں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مسن شہر ایک قدیمی شہر ہے، تعلیم کے مقابلے میں بھی یہ شہر بہت آگے ہے لیکن اس شہر کو منتخب نمائندوں نے کبھی بھی کوئی سہولت نہیں دی، یہاں کی گلیاں ،بازار گندگی کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئے ہیں، رہائشی اپنی مدد آپ کے تحت اپنے محلے اور گلیاں صاف کرنے پر مجبور ہیں ،گیس کی سہولت ہوتے ہوئے بھی گیس کی سہولت نہ ہونے کے برابر ہے، مسن شہر کے چاروں اطراف کے راستے کھنڈرات میں تبدیل ہوگئے ہیں ،سب سے بڑا مذاق مسن کے شہریوں کے ساتھ یہ ہے کہ پل موری سے آدھا کلو میٹر روڈ بنایا گیا اور مسن کو چھوڑ دیا گیا ہے۔ آخر مسن کے شہریوں کو کب تک عذاب میں مبتلا رکھا جائے گا۔ مسن کے عوام کے لیے واٹر سپلائی کے لیے تالاب بنائے گئے تھے لیکن حکومت اور منتخب نمائندوں کی عدم توجہ کی وجہ سے وہ بھی مکمل طور پر تباہ ہوگئے ہیں جس کی وجہ سے مسن کے عوام پینے کا میٹھا پانی دور دراز سے بھر کر لانے پر مجبور ہیں، ہمیں پانی جیسی سہولت سے بھی محروم رکھا ہواہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مسن کے عوام کوناانصافیوں اور محرومیوں کی دلدل میں دھکیل دیا گیا ہے۔ منتخب نمائندے مسن کے شہریوں کے ساتھ آخر کب تک سوتیلی ماں کا سلوک روا رکھیں گے۔ مسن کے شہریوں کا بنیادی حق ہے ۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ مسن شہر کی ترقی، خوشحالی اور بنیادی مسائل حل کیے جائیں تاکہ مسن کے شہریوں کو احساس محروم سے نکالا جائے کیونکہ مسن کے شہری بھی پاکستان اور سندھ کے شہری ہیں جبکہ بنیادی مسائل حل ہونا مسن کے شہریوں کا قانونی حق ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.