بدین ، زکوٰۃ و عشر کے ملازمین کا تنخواہیں اور مراعات نہ ملنے کیخلاف احتجاج

43

بدین( نمائندہ جسارت)سندھ میں محکمہ زکوٰۃ وعشر میں کام کرنے والے 800سے زائد ملازمین کو مستقل نہ کیا جاسکا، 2016ء میں تنخواہوں میں اضافہ نہ ہونے کے خلاف بدین پریس کلب پر احتجاجی مظاہرہ۔ تفصیلات کے مطابق سندھ بھر میں محکمہ زکوٰۃ و عشر میں کام کرنے والے 800سے زائد ملازمن کو مستقل نہ کیا جاسکا ملازمین میں آڈٹ آفیسر،اسٹنٹ آڈٹ آفیسر، اسٹنٹ آڈیٹر عاملین اور زکوٰۃ کے کلرک بھی شامل ہیں ۔ حکومتی وعدے کے بعد کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا قانون بل پاس ہونے کے باوجود ملازمین کو مستقل نہ کیا جاسکا ہے جس کے باوجود ملازمین فاقہ کشی والی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔ اس سلسلے میں ملازمین عبدالعلی گوپانگ،جہانزیب ترک،زمان مرادانی،جمن مگسی اور دیگر ملازمین نے بدین پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے کہا کہ محکمہ زکوٰۃ و عشر سندھ سمیت بدین ضلع میں 52ملازمین سمیت محکمہ میں 800سے زائد کنٹریکٹ ملازمین کام کر رہے ہیں، سندھ اسمبلی صوبے میں دیگر محکموں میں کام کرنے والے ملازمین کو بل پاس ہونے کے بعد فوری مستقل کیا گیا ہے لیکن محکمہ زکوٰۃ کے ملازمین کو مستقل نہیں کیا جارہا ہے ۔ انہوں الزام عائد کیا کہ سندھ حکومت ملازمین کو مستقل کرنے کے بجائے میرٹ کی دھجیاں اڑارہی ہے جبکہ محکمے میں کام کرنے والے ملازمین کی 2016ء میں پیش کی جانے والی بجٹ میں تنخواہوں میں اضافہ کیا گیا تھا لیکن تاحال سیلری میں اضافہ نہیں کیا جاسکا ہے ۔انہوں نے مطالبہ کیا ہماری بڑھائی گئی سیلری جلد ادا کی جائے ورنہ دوبارہ احتجاج کی کال دیں گے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ