مزدور سرمایہ ہیں

51

تحریر: محمد عمران

مزدور وہ طاقت ہے جو کسی بھی ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرسکتی ہے جبکہ کسان بھی مزدور کے طبقے میں ہی آتے ہیں۔ مزدوروں کی محنت سے صنعتوں کو فروغ ملتا ہے۔ مزدوروں کی وجہ سے صنعت دنیا میں نام ہی نہیں کماتی بلکہ ورکرز کا اعتماد بھی حاصل کرتی ہے، ساتھ ہی ملک کی معیشت بھی بہتر ہوتی ہے، ہم نے کبھی یہ سوچا ہے کہ اگر مزدور یعنی کسان طبقہ نہ ہو تو کیا ہوگا، اناج پیدا نہیں ہوگا اور اگر اناج پیدا نہیں ہوا تو ملک میں خانہ جنگی شروع ہوجائے گی۔ ہمارے ملک میں بے تحاشا وسائل موجود ہیں مگر افسوس ان وسائل کا صحیح استعمال نہیں ہورہا ہے۔ آپؐ نے فرمایا ’’مزدور کو اس کی اجرت اس کا پسینہ خشک ہونے سے پہلے ہی دے دیا کرو‘‘۔ کسی بھی ادارہ میں مزدور ایک واحد اثاثہ ہے جس کی صلاحیت وقت کے ساتھ ساتھ کار آمد ہوتی رہتی ہے۔ کوئی بھی صنعتی ادارہ اس وقت تک ترقی کی راہ پر گامزن نہیں ہوسکتا جب تک اس ادارے کے مزدور دل جوئی کے ساتھ کام نہ کریں۔ کسی بھی ڈر اور خوف کے بغیر کام کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ