ترقی کے لیے کام سے محبت کریں‘ سہیل احمد

30

پروفیسر سید سہیل احمد نے پروگرام کے تیسرے دن 13 ستمبر کو نیلاٹ میں لیکچر دیتے ہوئے کہا کہ جدید ٹیکنالوجی کی وجہ سے لوگوں کا وقت برباد ہورہا ہے۔ موبائل، اسمارٹ فورٹ، سوشل میڈیا، فیس بک اور دیگر کے استعمال کی وجہ سے لوگ اپنے وقت کا درست استعمال نہیں کرپاتے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیوٹی 8 یا 9 گھنٹے ہے لیکن سفر میں مجموعی طور پر 3 گھنٹے اضافی لگ جاتے ہیں۔ سفر میں تھکن کے اثرات ملازمت پر پڑتے ہیں۔ انہوں نے ڈیوٹی پر 10 منٹ دیر سے آنے پر مزدوروں کی کیفیت کیا ہوتی ہے پر ریہرسل کرائی۔ شرکاء نے 10 منٹ ڈیوٹی پر دیر سے آنے پر اپنی کیفیت بتاتے ہوئے کہا کہ شرمندگی ہوتی ہے، آنے کی 10 منٹ قبل تیاری کرلیں دیر سے آنے میں مزید کام دیر سے ہوتے ہیں جس کا اثر پیداوار پر بھی پڑتا ہے۔ پروفیسر سہیل نے کامیاب زندگی گزارنے کا فارمولا بتاتے ہوئے کہا کہ مقصد کو حاصل کرنے کے لیے تیاری اور منصوبہ بندی کریں۔ اس کے بعد کارکردگی سامنے آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ کام کے دوران دھیان مقصد کی طرف رکھیں۔ دماغ میں مختلف خیالات آنے کی وجہ سے پیداوار پر بھی اثر پڑسکتا ہے۔ کسی مرحلہ پر حادثہ بھی ہوسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقی کے لیے کام سے محبت کریں، ڈیوٹی پر آنے اور جانے کے مقررہ اوقات پر جائیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.