قادیانی اقلیت نہیں،پاکستان کے غدار ہیں،حافظ نصراللہ

37

کراچی( اسٹاف رپورٹر )جماعت اسلامی سندھ کے نائب امیرحافظ نصراللہ عزیز نے کہا ہے کہ قادیانی ایک فتنہ ہیں جو قیام پاکستان سے اب تک ملک کی نظریاتی سرحدوں کو کھوکھلا کرنے میں مصروف ہیں۔ اقتصادی مشاورتی کونسل میں قادیانی مبلغ کے تقرر سے لے کر ملک میں قادیانیوں کی بڑھتی ہوئی سرگرمیوں وحکومتی وزرا کی وکالت سے محسوس ہو رہا ہے کہ نئے پاکستان کے دورمیں اسلامی جمہوریہ پاکستان کو قادیانستان بنانے کی سازش ہو رہی ہے۔ قادیانی مذہبی اقلیت نہیں بلکہ اسلام و آئین پاکستان کے غدار ہیں۔ انہوں نے ایک بیان میں کہا کہ قادیانی مبلغ عاطف میاں کو جواز بنا کر اسلام اور آئین پاکستان کا مذاق اڑانے والے اسلام و پاکستان کے دشمن ہیں۔ اسلام اقلیتوں کے جان و مال کی حفاظت اور احترام انسانیت کا درس دیتا ہے۔ دینی جماعتیں جسٹس (ر) بھگوان داس سمیت دیگر اقلیتوں سے وابستہ شخصیات کی خدمات کی معترف ہیں۔ سندھ میں بھی ایک صوبائی وزیر مکیش چاؤلہ وزیر ہیں، ان پرکسی نے بھی کوئی اعتراض نہیں کیا۔ قادیانی مذہبی اقلیت نہیں بلکہ اسلام و آئین پاکستان کے غدار ہیں، اصولی طور پر انہیں ریاست بدر کردیا جانا چاہیے ۔انہوں نے مزید کہا کہ بیورو کریسی سمیت حساس اداروں میں موجود قادیانیوں پر نظرداری اور قادیانیوں کی سرگرمیوں کا نوٹس لیا جائے، آئین پاکستان کا انکار کرنے والے کس طرح ملک کے وفادار اورکلیدی عہدوں پر براجمان ہوسکتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.