نجی اسپتالوں نے علاج کے نام پر لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے‘عدالت

44

لاہور (نمائندہ جسارت) چیف جسٹس پاکستان کی سربراہی میں قائم 2رکنی بینچ نے نجی اسپتالوں میں مہنگے علاج معالجے سے متعلق از خود نوٹس کیس میں ڈاکٹرز اسپتال، نیشنل اسپتال، سرجیمڈ اسپتال اور حمید لطیف اسپتال سمیت دیگر کے سی ای اوز کو آج طلب کر لیا۔ عدالت نے سیکرٹری صحت اورہیلتھ کئیر کمیشن کے سربراہ کو بھی طلب کر لیا۔عدالت عظمیٰ لاہور رجسٹری میں سماعت کرتے ہوئے عدالت نے نجی اسپتالوں کے چارجز ریٹ کی فہرستیں بھی طلب کر لی ہیں۔ دوران سماعت فاضل چیف جسٹس نے
ریمارکس دیے کہ نجی اسپتالوں نے علاج کے نام پر لوٹ مار کا بازار گرم کر رکھا ہے۔ نجی اسپتالوں کو لوٹ مار کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ فاضل چیف جسٹس نے کہا کہ اسپتالوں میں پارکنگ کی جگہ نہیں اور گاڑیاں سڑکوں پر کھڑی کر کے ٹریفک کی روانی کو متاثر کیا جاتا ہے۔ اگر اب اسپتالوں کے باہر سڑکوں پر گاڑیاں کھڑی ہوں گی تو انہیں10 ہزار جرمانہ کیا جائے گا۔ اور یہ رقم ڈیم فنڈ میں جمع کی جائے گی۔ چیف جسٹس نے نالوں پر بنے اسپتالوں کے بارے میں محکمہ ماحولیات سے بھی رپورٹ طلب کر لی ہے، ازخود نوٹس پر مزید سماعت آج ہو گی۔
عدالت

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.