سندھ پبلک سروس کمیشن حیدرآباد قانونی کارروائی کا حق رکھتا ہے 

42

حیدرآباد(نمائندہ جسارت)سندھ پبلک سروس کمیشن حیدرآباد کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز میں پرنٹ میڈیا اور سوشل میڈیا پر ا انجینئررنگ گیڈر کے لیے کمبائنڈ کمپیٹیٹیو امتحان 2017ء میں ناکام ہونے والے امیدواروں کی جانب سے سندھ پبلک سروس کمیشن پر بد عنوانی اور اقربا پروری کے الزامات کا سخت نوٹس لیتے ہوئے بتایا ہے کہ مذکورہ امتحانات میں کمیشن کی جانب سے شفافیت کو برقرار رکھا گیا اور کسی بھی ناکام امیدوار کو انٹرویو کی اجازت نہیں دی گئی اور نہ ہی کسی دیہی کوٹہ کے امیدوار کو شہری کوٹہ پر منتخب کیا لیکن امیدواروں کی جانب سے امتحانی فارم کے ساتھ مقررہ آخری تاریخ تک ان کی تعلیمی قابلیت کی بنا پر انہیں امتحان میں حصہ لینے کی اجازت دی گئی۔ پریس ریلیز میں مزید بتایا گیا ہے کہ مذکورہ امتحان کے حوالے سے ناکام امیدوروں کی جانب سے تمام الزامات بے بنیاد اور کمزور ہیں جبکہ سندھ پبلک سروس کمیشن حیدرآباد ادارہ کو بدنام کرنے والے افراد کے خلاف قانونی کارروائی کا حق رکھتا ہے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ