عمران خان رہائشی منصوبے میں سر کاری کوارٹرز بھی شامل کریں ‘ سراج الحق

193
امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق سے ادارہ نورحق میں سرکاری کوارٹرز کے مکین ملاقات کررہے ہیں
امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق سے ادارہ نورحق میں سرکاری کوارٹرز کے مکین ملاقات کررہے ہیں

کراچی (اسٹاف رپورٹر )جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ وزیر اعظم عمران خان اپنے 100 دن کے ایجنڈے میں شامل عوام کو 50لاکھ مکانات تعمیر کر کے دینے کے اعلان اور منصوبے میں کراچی کے سر کاری کوارٹرز کے 5ہزار گھرانوں کو بھی شامل کریں ۔ سر کاری کوارٹروں کے مکینوں کو بے دخل کرنے کے بجائے ان کو مالکانہ حقوق دیے جائیں ۔ جماعت اسلامی سرکاری کوارٹروں کے مکینوں کے ساتھ ہے ۔ ماضی کی حکومتوں اور یہاں کے عوامی نمائندوں نے اس مسئلے کو مکمل طور پر نظر انداز کیا ۔ اگر مسئلہ حل نہ ہوا تو یہ معاملہ سینیٹ میں بھی اُٹھائیں گے ۔ مکینوں کو ان کا حق دلائیں گے ان کو تنہا نہیں چھوڑیں گے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ نور حق میں مارٹن کوارٹرز ، کلیٹن کوارٹرز اور دیگر سر کاری کوارٹروں کے مکینوں کے ایک وفد سے ملاقات میں کیا ۔ وفد میں سر کاری کوارٹروں میں رہائش پذیر مردو خواتین کی بہت بڑی تعداد شامل تھی ۔ وفد نے اپنے مسائل اور مشکلات سے آگاہ کیا اور اپیل کی کہ وہ یہ مسئلہ حل کرانے میں اپنا کردار ادا کریں ۔ ملاقات میں امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن ، پبلک ایڈ کمیٹی کے صدر سیف الدین ایڈووکیٹ ، سیکرٹری جنرل نجیب ایوبی ، سابق یوسی نائب ناظم کلیم الحق عثمانی ،فہیم اللہ خان اور دیگر بھی شامل تھے ۔ سراج الحق نے کہا کہ سر کاری کوارٹروں میں رہائش پذیر افراد کی تعداد تقریباً5لاکھ بنتی ہے ۔ان کو مالکانہ حقوق دینے کے بجائے بے دخل کر نے کی کوشش کی گئی تو لاکھوں افراد متاثر ہوں گے جسے کسی صورت قبول نہیں کیا جائے گا۔ وفاقی حکومت ایسا کر نے سے باز رہے ۔ انہوں نے کہا کہ قیام پاکستان کے بعد ہجرت کر کے آنے والے سرکاری ملازمین کو آبادکاری کے لیے یہ کوارٹرز بنا کر دیے گئے تھے ۔ جن میں آج ان کی اولادیں اور بیوائیں وغیرہ رہائش پذیر ہیں ۔ ان کو خالی کرانے کی کوشش کی جارہی ہے جو انتہائی افسوسناک اور قابل مذمت ہے ۔ سر کاری کوارٹروں کے حوالے سے حکومت کی طرف سے غلط بیانی کر کے عدالتوں کو گمراہ کر نے کی کوشش کی گئی ہے ۔ یہ افراد نہ تو کرائے دار ہیں اور نہ ہی کوئی قابض ہیں ۔ ضرورت اس بات کی ہے کہ اس معاملے کو قانونی پیچیدگیوں میں اُلجھانے کے بجائے مکینوں کو مالکانہ حقوق دیئے جائیں اور ان کو ملکیت کی قانونی دستاویزات دی جائیں ۔ سراج الحق نے کہا کہ نئی حکومت سے عوام کو بڑی امیدیں وابستہ ہیں ۔ وزیر اعظم عمران خان نے اپنے ایجنڈے میں عوام کے لیے 50لاکھ مکانات تعمیر کر نے کا منصوبہ بھی پیش کیا ہے ۔ اس منصوبے میں کراچی کے 5ہزار مکانات کو بھی شامل کر لیا جائے تو یہ مسئلہ حل ہو جائے گا ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.