سندھ مدرستہ الاسلام اور چینی یونیورسٹی کے درمیان تعاون پراتفاق

43

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )سندھ مدرستہ الاسلام یونیورسٹی اور چین کی ساؤتھ چائنا یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی،گوانگزوکے درمیان کئی شعبہ جات خاص کر فیکلٹی اور طالبعلموں کی تربیت اور ریسرچ ورک میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔ یہ اتفاق جمعرات کے روز سندھ مدرسہ یونیورسٹی کا دورہ کرنے والے چینی جامعہ کے وفد اور وائس چانسلر ڈاکٹر محمد علی شیخ کے درمیان ہونے والی ملاقات میں کیا گیا۔اس موقع پر سر شاہنواز بھٹو آڈیٹوریم میں ایک تعارفی پروگرام بھی منعقد کیا گیا۔
جہاں پرساؤتھ چائنا یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی کی پروفیسر ڈاکٹرآے این رین نے اپنے خطاب میں کہا کہ اس دورے کا مقصد پاکستانی لوگوں سے ملنا تھا۔ تاکہ دونوں ممالک کے لوگ خاص کر نوجوان نسل کو سیکھنے کا موقع مل سکے۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے پاکستان میں کراچی، اسلام آباد اور پشاور کا دورہ کیا جہاں پر پاکستان کے جداگانہ ثقافتی رنگ نے انہیں کافی متاثر کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ وہ یہ جاننا چاہتی ہیں کہ پاکستانی لوگ سی پیک کے بارے میں کیا جانتے ہیں جبکہ وہ ایس ایم آئی یو اور اپنی جامعہ کی اہمیت کو اجاگر کرنا چاہتے ہیں۔سندھ مدرسہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد علی شیخ نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستان اور چین کے درمیان عوامی سطح پرخاص کر نوجوان نسل میں رابطوں کی ضرورت ہے۔ کیوں کہ دونوں ممالک کے نوجوانوں میں بہت زیادہ صلاحیتیں موجود ہیں اور وہ مستقبل میں اپنے ممالک کیلئے اہم فیصلے کرسکتے ہیں۔پاکستان اور چین کے درمیان تاریخی روابط ہیں۔سلک روڈ کے زریعے پاکستان چین سے اور سمندری راستے سے ایک پورٹ سٹی کراچی کادوسرے پورٹ سٹی گوانگزو سے رابطہ ہوسکتا ہے۔ڈاکٹر محمد علی شیخ نے کہا کہ سندھ مدرسہ یونیورسٹی اور ساؤتھ چائنا یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی ایک دوسرے کے ساتھ باہمی تعاون خاص کر سی پیک کے ذریعے خطے میں اہم تبدیلی لاسکتے ہیں۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ایس ایم آئی یو اور ساؤتھ چائنا یونیورسٹی آف ٹیکنالوجی دونوں ممالک چین اور پاکستان کے درمیان تعلقات کو مظبوط کرسکتے ہیں۔ چین کے وفد میں شامل دیگر افراد میں پروفیسر کانگ شانگ،اسوسی ایٹ پروفیسر ندیم اختر ، وو ینران اور لیو زن شامل تھے۔ اس موقع پر ایس ایم آئی یو کے ڈینز، چیئرپرسنز، فیکلٹی میمبرز، سینیئر مینجمنٹ اور طالبعلموں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔
سندھ مدرستہ الاسلام

Print Friendly, PDF & Email
حصہ