50 کروڑ کے انڈومنٹ فنڈ کے شفاف استعمال کیلیے 4 رکنی کمیٹی قائم

42

اسلام آباد (اے پی پی) نگراں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات، قومی تاریخ و ادبی ورثہ بیرسٹر سید علی ظفر نے 50 کروڑ روپے کے انڈومنٹ فنڈ کے شفاف استعمال کو یقینی بنانے کے لیے 4 رکنی ایگزیکٹو کمیٹی کے قیام کی منظوری دے دی۔ وفاقی سیکرٹری قومی تاریخ و ادبی ورثہ ڈویژن انجینئر عامر حسن کی سربراہی میں قائم کمیٹی انڈومنٹ فنڈز کے شفاف استعمال کو یقینی بنانے کے علاوہ ملک میں علمی، ادبی اور تاریخی ورثے سے متعلق سرگرمیوں، منصوبہ جات کی نشاندہی، رقوم کی فراہمی اور نگرانی کے امور کی بھی ذمے دار ہوگی۔ وفاقی وزیر بیرسٹر سید علی ظفر نے جمعرات کو قومی تاریخ و ادبی ورثہ ڈویژن میں منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس کے دوران ایگزیکٹو کمیٹی کی تشکیل کے حکنامے پر دستخط کیے۔ کمیٹی کے دیگر ارکان میں ممتاز صحافی حمید ہارون، اعجاز رحیم، پروفیسر ڈاکٹر اشرف اور نامور لکھاری مشرف علی فاروقی شامل ہیں۔ یہ انڈومنٹ فنڈ گزشتہ حکومت کے دور میں 50 کروڑ روپے کی لاگت سے قائم کیا گیا تھا جس کا مقصد علمی، ادبی اور تاریخی ورثے سے متعلق سرگرمیوں کا فروغ اور مستحق لکھاریوں کی امداد کے لیے وسائل کی فراہمی کو یقینی بنانا تھا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اطلاعات بیرسٹر سید علی ظفر نے کہا کہ بچوں کو کتاب دوستی کی طرف راغب کرنے کے لیے نامور شخصیات کی خدمات حاصل کی جائیں جو بچوں کو کتابیں پڑھ کر سنائیں۔ جب وہ نامور شخصیات سے کتاب سنیں گے تو اس سے ان میں مطالعے کا شوق پیدا ہوگا۔ اس پروگرام کا آغاز اسلام آباد سے ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ