حدیدہ میں گھمسان کی لڑائی،4 اماراتی فوجی ہلاک 

49

ابوظبی/ صنعا (انٹرنیشنل ڈیسک) متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج نے یمن کے ساحلی شہر حدیدہ میں سعودی عرب کی قیادت میں باغیوں کے خلاف جاری لڑائی کے دوران اپنے 4 فوجی مارے جانے کی تصدیق کی ہے۔ امارات کی سرکاری خبر رساں ایجنسی کے مطابق حدیدہ میں لڑائی کے دوران فرسٹ نیول سارجنٹ خلیفہ سیف سعید خاطری، علی محمد راشد حسانی، سارجنٹ خمیس عبداللہ خمیس زیودی اور عریف حمدان سعید عبدولی مارے گئے ہیں۔ اماراتی افواج نے چاروں کے لواحقین سے تعزیت کی ہے۔ دوسری جانب عرب اتحاد نے جمعرات کے روز اعلان کیا ہے کہ اتحادی افواج حدیدہ ائرپورٹ سے صرف 6کلومیٹر کی مسافت پر رہ گئی ہیں۔ عرب اتحاد کے فیصلہ کن معرکے سنہری نصرت کا مقصد اس ہوائی اڈے اور بندرگاہ کو باغیوں سے چھڑانا ہے۔ واضح رہے کہ اپنی شکست کے واضح آثار دیکھ کر حوثیوں کے سرپرست اپنی جائیدادیں فروخت کرنے لگے ہیں۔ حدیدہ شہر میں مقامی شہریوں نے تصدیق کی ہے کہ حوثی ملیشیا کے سرکردہ عہدے دار،
ان کے سرپرست اور شہر میں بڑی بڑی جائیدادوں کے مالک بھی اپنی جائیدادیں دوسرے شہریوں کو فروخت کرکے وہاں سے فرار ہونے کی کوشش کررہے ہیں۔ ادھر حدیدہ پر قبضے کی جنگ کی صورت حال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں جمعرات کے روز غور کیا گیا۔ اس اجلاس برطانیہ کی درخواست پر بلایا گیا۔ سلامتی کونسل کا یہ اجلاس بند دروازے کے پیچھے ہوا۔
حدیدہ/ لڑائی

Print Friendly, PDF & Email
حصہ