بھارت: شدید گرمی اور گرد و غبار‘ شہری پریشان‘ 10افراد ہلاک

44

نئی دہلی (انٹرنیشنل ڈیسک) بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں شہری غیر معمولی گرد و غبار پیدا ہونے والی فضائی آلودگی اور شدید موسم کا سامنا کر رہے ہیں۔ طبی ذرائع کا کہنا ہے کہ شہریوں کی جانب سے سانس کی تکلیف کی شکایات کی گئی ہیں جب کہ بہت سے افراد کا کہنا ہے کہ اب یہ شہر رہنے کے قابل نہیں رہا۔ ریاست کی حکومت کی جانب سے تعمیرات کے تمام کام روک دیے گئے ہیں اور شہر کی سڑکوں پر پانی کے چھڑکاؤ کے لیے فائر بریگیڈ تعینات کرنے کے علاوہ شہریوں کو زیادہ تر گھروں میں رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق تازہ صورتحال یہ ہے کہ گرد وغبار میں زہریلا مواد بھی شامل ہے۔ سینٹر فار سائنس اینڈ انوائرمنٹ کی ایگزیکٹو ڈائریکٹر انومتا رائے چودھری نے بی بی سی کو بتایا کہ آلودگی کی سطح عام دنوں سے
تقریباً 9 گنا زیادہ ہے۔ زہریلا مواد ہمارے اندر جارہا ہے، جس سے صحت کے شدید مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔ نئی دہلی کا شمار دنیا کے آلودہ ترین شہروں میں ہوتا ہے لیکن حالیہ موسمی صورتحال کی وجہ سے یہاں کے شہریوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوا ہے۔ بہت سے افراد اپنے خدشات کا اظہار سوشل میڈیا پر کر رہے ہیں اور حکومت سے مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ وہ اس حوالے سے اقدامات کرے۔ محکمہ موسمیات کے مطابق پری مون سون میں یہ رجحان غیر معمولی نہیں ہے لیکن اس بار مون سون کی بارشوں میں تاخیر سے گرد و غبار کی فضا زیادہ دیر تک قائم رہی ہے۔ دہلی میں ہر سال نومبر اور دسمبر میں فضائی آلودگی میں اس وقت اضافہ ہوتا ہے جب ہمسایہ ریاستوں پنجاب اور ہریانہ میں کسان فصلوں کی کٹائی کے بعد کھیتوں میں آگ لگاتے ہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے مطابق گزشتہ سال دہلی کی کچھ علاقوں میں آلودگی اپنی محفوظ سطح سے 30 گنا سے بھی تجاوز کر گئی تھی۔ دوسری جانب مقامی میڈیا کے مطابق یو پی میں گردوغبار کے طوفان میں 10افراد ہلاک ہوگئے۔ ریاست کے مختلف علاقوں میں رات گئے گرد آلود آندھی سے وسطی اور مشرقی یوپی میں مکانات منہدم ہوگئے۔ درخت کے نیچے دب کر 2بچے ہلاک ہوگئے۔ طوفان گردوباد سے نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا۔ سیکڑوں درخت جڑوں سے اکھڑ کر سڑکوں پر آگرے جس سے ٹریفک کا نظام متاثر ہوا۔ کچے مکانات کی چھتیں اڑ گئیں۔گرد آلودطوفان نے سب سے زیادہ سیتا پور میں تباہی پھیلائی۔ وہاں 7افراد کی موت واقع ہوئی۔ ایک مسجد کا مینار گرنے سے ایک شخص دب کر بھی ہلاک ہوگیا۔ فیض آباد ضلع میں بھی ایک شخص کی موت ہوئی۔ سیتا پور میں 17اور فیض آباد میں 11افرادزخمی ہوگئے۔ ریاستی حکومت کے ترجمان نے بتایا کہ متاثرہ اضلاع میں راحت رسانی کی ٹیمیں علاقے میں روانہ کردی گئی ہیں۔
بھارت ؍ گرد و غبار

Print Friendly, PDF & Email
حصہ