اساتذہ تنظیموں کا عید کے دن پریس کلب پر علامتی بھوک ہڑتال کا اعلان

48

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) عدالت عظمیٰ کے احکامات کے باوجود محکمہ اسکول ایجوکیشن کی جانب سے سال2012ء کے اساتذہ اور غیر تدریسی عملے کو2دن میں تنخواہیں جاری نہ کرنے کے خلاف اساتذہ تنظیموں نے عید الفطر کے دن کراچی پریس کلب پر احتجاج اور علامتی بھوک ہڑتال کا اعلان کیا ہے اور آئند ہ ہفتے چیف جسٹس کی کراچی آمد کے موقع پر سپریم کورٹ کراچی رجسٹری کے سامنے محکمہ اسکول ایجوکیشن کے خلاف سخت احتجاج کا عندیہ دیا ہے ۔نیو
ٹیچرز ایکشن کمیٹی کے چیئرمین ابو بکر ابڑو کا کہنا تھا کہ سیکرٹری اسکول ایجوکیشن اساتذہ کے معاملے کو حل کرنے میں سنجیدہ نہیں اور وہ جان بوجھ کر معاملے کو طول دے رہے ہیں،اگر سال2013ء میں کی گئی اسکرونٹی پر عمل کرلیا جائے تو اساتذہ کا مسئلہ دنوں میں نہیں گھنٹوں میں حل ہو سکتا ہے۔اس ضمن میں ذرائع نے بتایا کہ سیکرٹری اسکول ایجوکیشن اقبال درانی سے جمعرات کے روز نیو ٹیچرز ایکشن کمیٹی کے چیئرمین ابو بکر ابڑو ،جنرل سیکرٹری افضل کوریجو ،ٹیچرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین ظہیر بلوچ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کے نمائندوں نے ملاقات کی تھی اور ان سے چیف جسٹس کے احکامات کے مطابق اساتذہ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کو تنخواہیں جاری کرنے کے فیصلے پر عملد رآمد کا مطالبہ دہرایا اس موقع پر سیکرٹری اسکول ایجوکیشن اقبال درانی کا کہنا تھا کہ سال2012ء کے 6ہزار متاثرین نے اپنی فائلیں جمع کرائی ہیں جن کی جانچ پڑتال کی جارہی ہے اب تک 70فائلوں کی جانچ کی گئی ہے، اس لیے محکمہ کو مزید وقت درکارہو گا، جس کے بعد ہی تنخواہوں کے اجرا کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا، تاہم اس سے قبل چیف جسٹس کی کراچی آمد پر انہیں جمع شدہ فائلوں کی سمری بھی فراہم کی جائے گی۔اس حوالے سے نیو ٹیچرز ایکشن کمیٹی کے چیئرمین ابو بکر ابڑو کا کہنا تھا کہ ہم محسوس کر رہے ہیں کہ سیکرٹری تعلیم ٹال مٹول سے کام لے رہے ہیں اس سے قبل محکمہ اسکول ایجوکیشن کئی بار اسکروٹنی کرچکا ہے تو پھر سوال یہ ہے کہ پہلے کی گئی اسکرونٹی کو کیاٹوپی ڈرامے کا نام دیا جائے؟ اس لیے ہم سمجھتے ہیں کہ محکمہ اسکول ایجوکیشن اسکرونٹی کی آڑ لے کر اپنے پہلے سے بنائے منصوبے پر عمل پیرا ہے اور اس کا مقصد صرف یہ ہے کہ ان اساتذہ اور نان ٹیچنگ اسٹاف کی تنخواہوں کو جاری نہ ہونے دیا جائے، اسی لیے محکمہ تاخیری حربے استعمال کر رہا ہے ۔اس صورتحال کے پیش نظر اساتذہ اور نان ٹیچنگ اسٹاف نے متفقہ فیصلہ کیا ہے کہ عید الفطر کے پہلے دن صبح11بجے کراچی پریس کلب پر احتجاج کیساتھ علامتی بھو ک ہڑتال بھی کی جائے گی اور عیدکے بعد چیف جسٹس کی آئندہ ہفتے کراچی آمد پر سپریم کورٹ کراچی رجسٹری کے سامنے محکمہ اسکول ایجوکیشن کے خلا ف بھر پور احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا اور چیف جسٹس سے معاملے کا از خود نوٹس لینے کی دوبارہ اپیل بھی کریں گے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ