جماعت اسلامی مظلوموں کی ترجمان ہے ،سراج الحق ،کراچی پشاور اور لاہور میں یوتھ کنونشن کا اعلان 

377
لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق منصورہ میں امرائے ضلع کی لیڈر شپ تربیتی ورکشاپ کے اختتامی اجلاس سے خطاب کررہے ہیں
لاہور: امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق منصورہ میں امرائے ضلع کی لیڈر شپ تربیتی ورکشاپ کے اختتامی اجلاس سے خطاب کررہے ہیں

لاہور (نمائندہ جسارت)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کراچی ، پشاور اور لاہور میں یوتھ کنونشن کا اعلان کرتے ہوئے کہاہے کہ جماعت اسلامی مظلوموں کی ترجمان ہے ، عوام غربت کی چکی میں پس رہے ہیں ، مستقبل ان شاء اللہ اسلام کا ہے، اسلامی پاکستان ہی خوشحال پاکستان
ہے، امریکا ، اسرائیل اور بھارت پاکستان کو عالمی سطح پر تنہا کرنے اور دہشت گردی کا معاون ملک قرار دینے کے لیے ایڑی چوٹی کا زور لگانے میں مصروف ہیں۔ فرانس میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے اجلاس میں فی الحال کوئی اقدام نہیں اٹھایا گیا تاہم ہمارے دشمن اس کے لیے کوشاں ہیں ۔ 3 ماہ کا مزید وقت دیا گیاہے ۔ حکومت پاکستان نے جس طرح اداروں کے ساتھ محاذ آرائی کا سلسلہ جاری رکھاہوا ہے اور ایک شخص کو بچانے کے لیے پوری حکومت ایڑی چوٹی کا زور لگا رہی ہے اسے ملکی مفادات کے تحفظ کی کوئی پرواہ نہیں ہے ۔ بھارت کے اندر ہندو تنظیمیں مسلمانوں کا قتل عام کررہی ہیں۔ کشمیر میں بھارتی فوج روزانہ مسلمانوں کو قتل اور تشدد کا نشانہ بنا رہی ہیں ۔ افغانستان سے پاکستان میں بھارتی قونصل خانے دہشت گردکاروائیاں کرانے میں ملوث ہیں۔بھارت ایل او سی پر سول آبادی پر روزانہ گولا باری کر کے نہتے عوام کو قتل کررہاہے اورکمزور سفارت کاری کی وجہ سے الٹا پاکستان کو کٹہرے میں کھڑا کیاہوا ہے ۔ بھارت کے خلاف اتنی شہادتیں ہیں اگر انہیں حکومت اکٹھا کرے تو وہ دنیا میں منہ دکھانے کے قابل نہ رہے۔ اگر یہی حال رہا تو دشمن پاکستان کو دہشت گرد ممالک کی معاونت کرنے والے ممالک میں شامل کرنے میں کامیاب ہو جائے گا ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ لاہور میں جماعت اسلامی کے ضلعی امرا اور سیکرٹریز کی 2 روزہ ٹریننگ ورکشاپ کے آخری سیشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ہمارا معاشرہ مظلوم اور غلام معاشرہ ہے ۔اس کی سیاست ، معیشت اور نظام تعلیم تک غلام ہے ۔ پوری آبادی کا بیشتر حصہ2 فیصد کے مفادات کے تحفظ میں لگا ہواہے اور اس کی پشت پر عالمی میڈیا اور اسٹیبلشمنٹ ہے ۔ ہمیں اس نظام کو تبدیل کرنااور اپنی ذمے داریوں کا احساس کرناہے ۔ ان حالات میں مظلوم وغلام انسانوں کا ترجمان بننا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں غربت اور افلاس نے ڈیرے ڈالے ہوئے ہیں ۔ ایک طرف ملکی وسائل کو سابق و موجودہ حکمرانوں نے لوٹ کر دولت کے انبار جمع کرلیے ہیں ۔ اندرو ن و بیرون ملک جائدادیں بنائی ہیں اور کاروبار سیٹ کیے ہیں ۔دوسری طرف یہ عالم ہے کہ عوام غربت کی چکی میں پس رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ مستقبل ان شاء اللہ اسلام کا ہے ۔ جماعت اسلامی نے عوام کو کرپشن فری پاکستا ن کا نعرہ دیا ہے ۔ اسلامی پاکستان ہی خوشحال پاکستان ہوگا ۔ یہاں پر سیاسی ، معاشی اور مالی کرپشن ہے جس کے خلاف ہم نے عوام کو کھڑا کرناہے ۔انہوں نے کہاکہ الیکشن 2018 ء پر فوکس کرناہے اور منظم و متحد ہو کر حالات کا مقابلہ کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ 3 مارچ کو کراچی میں ایک بڑا یوتھ کنونشن ہوگا ۔ 23 مارچ کو پشاور اور یکم اپریل کو پنجاب میں بڑے یوتھ کنونشن منعقد کیے جائیں گے جن میں لاکھوں نوجوان شریک ہوں گے ۔ سینیٹر سراج الحق نے ذمے داران جماعت کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ آپ کے پاس حق و سچائی اور مبنی بر حق پیغام ہے۔ آپ پورے اعتماد کے ساتھ اپنے مورچے میں ڈٹے رہیں اور اپنی ذمے داریاں پوری کرنے کا عزم کریں ۔ وسائل اور طاقت حاصل کریں ، ان شاء اللہ مستقبل اسلام کا ہے ۔