کراچی کی قیادت صرف جماعت اسلامی ہی کرسکتی ہے،حافظ نعیم

239
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن، اسامہ رضی، عبدالوہاب، عبدالواحد شیخ، یونس بارائی اور حافظ بلال یوتھ الیکشن اور رابطہ مہم کے حوالے سے ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کررہے ہیں
امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن، اسامہ رضی، عبدالوہاب، عبدالواحد شیخ، یونس بارائی اور حافظ بلال یوتھ الیکشن اور رابطہ مہم کے حوالے سے ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کررہے ہیں

کراچی(اسٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی کراچی کے امیرحافظ نعیم الر حمن نے کہا ہے حقیقی طور پر شہر کی قیادت صرف جماعت اسلامی ہی کرسکتی ہے۔ایم کیو ایم کی سیاست نے شہریوں کو کشمکش میں مبتلا کردیا ہے عوام کا کوئی پرسان حال نہیں،کراچی میں ماضی کی30 سالہ سیاست نے شہرکے لوگوں کو تباہی اور بربادی کے سوا کچھ نہیں دیا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ادارہ نور حق میں ’’ یوتھ الیکشن اور یوتھ رابطہ مہم ‘‘ کے سلسلے میں جماعت اسلامی کراچی کے تمام زونز کے امرا و نظم زون جے آئی یوتھ کراچی کے ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس سے جماعت اسلامی کراچی کے نائب امیر ڈاکٹر اسامہ رضی ،شہری و بلدیاتی امور کے نگراں و پبلک ایڈ کمیٹی کراچی کے صدر سیف الدین ایڈووکیٹ اورجے آئی یوتھ کراچی کے صدر حافظ بلال رمضان نے بھی خطاب کیا۔اس موقع پر حافظ نعم الرحمٰن نے اپنے خطاب میں کہاکہ ایم ایم اے کا پلیٹ فارم سیکولر اور لبرل لابی کے خلاف موثر کردار ادا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے ،مرکزی جماعت کے فیصلے کے مطابق آئندہ انتخابات میں ایم ایم اے کے پلیٹ فارم سے حصہ لیں گے ۔انہوں نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ یوتھ الیکشن کا حقیقی مقصد شہر کو متبادل قیادت فراہم کرنا ہے۔ اس سلسلے میں بڑے پیمانے پریوتھ رابطہ مہم چلائی جائے گی ، گھر گھر رابطے اور گلی محلے کی سطح پر نوجوانوں کو منظم و متحرک کرنا ہوگا ۔اس سلسلے میں ہفتہ 3 مارچ کو نشتر پارک میں ورکرزکنونشن منعقدہوگا۔امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق کنونشن سے خصوصی خطاب کریں گے ۔ کراچی یوتھ الیکشن ویوتھ رابطہ مہم نہایت اہمیت کے حامل ہیں، جسے پوری یکسوئی اور نظم وضبط کے ساتھ کرنے کی ضرورت ہے۔یوتھ الیکشن سے نوجوانوں کی نمائندگی اور قیادت کو مستحکم کرنا ہے، ہمیں اس کے لیے نوجوانوں کی روزانہ کی بنیاد پر ہونے والی سرگرمیوں کا رخ بدلنا ہوگااور یہ سارے کام ہمیں چیلنج سمجھ کر کرنے ہیں ۔حافظ نعیم الرحمٰن نے ہدایت کی کہ یوتھ الیکشن کے لیے تمام اضلاع اور زونز میں کیمپ لگائے جائیں ،ووٹر لسٹیں منظم کی جائیں اور اس حوالے سے ایک زبردست تحریک چلائی جائے۔ان کا کہنا تھا کہ یوتھ رابطہ مہم کے فوری بعد یوتھ الیکشن کا انعقاد کیا جائے گا، نوجوانوں کو متبادل قیادت کے طورسامنے لانا ہے تاکہ یوتھ لیڈر شپ یوسی اور زون کی سطح پر عوامی مسائل حل کرسکے اور آئندہ آنے والے انتخابات میں نوجوان زیادہ بہتر طریقے سے اپنا کردار ادا کرسکیں ۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی ایک نظریاتی جماعت ہے جس کے کارکنان بھی نظریاتی ہیں،جماعت اسلامی مقامی سطح پر بھی کام کرتے ہوئے ایک وسیع سوچ اور آفاقی وژن رکھتی ہے، ہمیں آگے بڑھنے کے لیے دعوتی و تنظیمی طور پر کام کو وسیع کرنا ہوگاکیونکہ جماعت اسلامی کے سوا کوئی جماعت نہیں جو اس شہر کے مزاج سے واقف ہو۔اس موقع پر اسامہ رضی نے رابطہ یوتھ مہم و ممبر سازی مہم کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ نوجوانوں کو جے آئی یوتھ میں ممبر بنانے کے لیے اپنے زون کے ذمے داران سے رابطہ کرکے نوجوانوں سے فارم بھروائیں ۔جماعت اسلامی زون کے امرا ممبر سازی مہم میں جے آئی یوتھ کے کارکنان کے ساتھ ہر قسم کا تعاون کریں گے اور اس پورے انتخابی عمل کی مانٹیرنگ کریں گے ۔انہوں نے کہا کہ ممبر سازی مہم کے حوالے سے تمام زون اور حلقے کی سطح پر کیمپ لگائیں جائیں گے اور گھر گھر رابطے کیے جائیں گے ۔ سیف الدین ایڈوو کیٹ نے کہا کہ جماعت اسلامی اول روز سے ہی عوامی مسائل کے حل کے لیے جدوجہد کررہی ہے ، کراچی میں سرکاری اداروں سمیت نجی اداروں نے شہریوں کے ساتھ ناروا اور تذلیل آمیز سلوک اپنایا ہوا ہے، سفار ش اور رشوت کے بغیر کوئی بھی کام ممکن نہیں رہا ہے ۔ ایسی صورتحال میں پبلک ایڈ کمیٹی جماعت اسلامی نے کے الیکٹرک اورنادرا کے خلاف زبردست تحریک چلائی جس کے بعد الحمد للہ پے در پے کامیابیاں نصیب ہوتی گئیں۔ ادارہ نورحق میں نادرا اور کے الیکٹرک کے سیل قائم کیے گئے ہیں جس میں روزانہ کی بنیاد پر شہری اپنے مسائل کے حل کے لیے یہاں رابطہ کرتے ہیں اور درخواستیں جمع کراتے ہیں۔ حافظ بلال رمضان نے ممبرسازی مہم کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ہم نے ممبر سازی مہم کو4ہفتوں میں ترتیب دیا ہے جس میں پہلے ہفتے میں تمام سطح پر ماڈل کیمپ لگائے جائیں گے ، دوسرے ہفتے میں یوتھ الیکشن کے حوالے سے شہر بھر میں مہم چلائی جائے گی ووٹر لسٹ ترتیب دی جائے گی ، تیسرے ہفتے میں نوجوانوں کے لیے اسپورٹس اور ورکشاپس جیسی مختلف سرگرمیاں منعقد کی جائیں گی اور چوتھے ہفتے میں بڑے پیمانے پر ممبر سازی مہم کے حوالے سے کنونشن منعقد کیے جائیں گے ۔