پنجاب میں منصوبے کے تحت بیورو کرنسی سے بغاوت کرائی جارہی ہے،زرداری

75
اسلام آباد، پی پی کے شریک چیئرمین آصف زرداری پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں
اسلام آباد، پی پی کے شریک چیئرمین آصف زرداری پریس کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں

اسلام آباد(خبر ایجنسیاں+مانیٹرنگ ڈیسک) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ پنجاب میں منصوبے کے تحت بیورو کریسی سے بغاوت کرائی جارہی ہے ،نواز شریف کی کوشش ہے کہ اداروں کو کمزور کیا جائے،ادارے کمزور ہونے سے ملک بھی کمزور ہو جاتا ہے،نوازشریف کاروباری آدمی ہیں ،کمیشن لیے بغیر کام نہیں کرتے ۔ جمعہ کے روز اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے آصف علی زرداری نے کہا کہ میاں صاحب سوائے کمیشن اور بزنس کے کوئی اور کام نہیں کرتے، انہوں نے پشتونوں اور بلوچوں کو حقوق نہیں دیے بلکہ صرف لاہور کو ہی نوازا۔آصف علی زرداری نے الزام عاید کیا کہ میاں صاحب کی کوشش ہے کہ اداروں کو کمزور کیا جائے۔ بیوروکریسی میں ان کے عزیز اور رشتے دار بیٹھے ہوئے ہیں۔ پنجاب میں بیوروکریسی سے بغاوت کرائی
جا رہی ہے جو ریاست کیخلاف بھی بغاوت ہے۔ ادارے کمزور ہونے سے ملک بھی کمزور ہو جاتا ہے۔ حکمرانوں کی ڈاؤن سائزنگ شروع ہو چکی ہے، اب یہ کوئی اقدام نہیں کر سکتے۔ان کا کہنا تھا کہ عام انتخابات وقت پر ہوتے دیکھ رہا ہوں۔ پاکستان مسلم لیگ ن سینیٹ الیکشن سے باہر نہیں ہوئی بلکہ موجود ہے، سینیٹ الیکشن کے بعد ہم عام انتخابات کی طرف جائیں گے۔ ہمیں اے این پی اور مولانا فضل الرحمان کی حمایت حاصل ہے۔لودھراں ضمنی الیکشن پر بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ وفاق اور صوبے میں اپنی حکومت ہو تو ووٹ لینا آسان ہوتا ہے۔ لودھراں ضمنی الیکشن کے لیے 4 ارب روپے بجٹ دیا گیا جبکہ حکومت نے گیس اور بجلی بھی دی۔سابق صدر نے کہا کہ عالمی سطح پر ہمارے خلاف سازشیں کی جا رہی ہیں۔ ہم گریٹر پنجاب منصوبے کو کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ مودی پاکستان کیخلاف مسلمان ملکوں کے ساتھ مل رہا ہے۔ ہمارے دور میں بھی واچ لسٹ میں ڈالنے جیسے مسائل سامنے آئے لیکن ہم نے مذاکرات کے ذریعے ان کو حل کیا۔