نواز شریف کے ارادوں پر شک ہے،ن لیگ عدلیہ کو ڈکٹیٹ کرنا چاہتی ہے،بلاول

143
نواز شریف کے ارادوں پر شک ہے،ن لیگ عدلیہ کو ڈکٹیٹ کرنا چاہتی ہے،بلاول
نواز شریف کے ارادوں پر شک ہے،ن لیگ عدلیہ کو ڈکٹیٹ کرنا چاہتی ہے،بلاول

لاہور/اسلام آباد(نمائندہ جسارت+آن لائن) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول زرداری نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ کے پاس کئی اختیارات ہیں اور ہم انتخابی اصلاحات بھی چاہتے ہیں لیکن نواز شریف کے ارادوں پر شک ہے، کوئی بھی تنہا عدالتی اصلاحات نہیں کر سکتا،شہباز شریف اور سیف الرحمن نے عدالتوں کو دھمکیاں دیں ، ہم عدالتوں کو دھمکیاں دینے کی بھرپورمذمت کرتے ہیں، نواز شریف کا اپوزیشن کا کردار ادا کرنا جائز نہیں ہے، ن لیگ عدلیہ کوڈکٹیٹ کرنا چاہتی ہے ، نواز شریف عدلیہ میں اصلاحات نہیں لانا چاہتے ، نوازشریف کے ووٹ کے تقدس کی بات مذاق ہے، نوازشریف پارلیمنٹ کا سہارا اس وقت لیتے جب وہ 4 سال تک وزیراعظم تھے لیکن اس وقت وہ قومی اسمبلی اور سینیٹ نہیں آتے تھے،سندھ حکومت را ؤانوار کی گرفتاری کے لیے کوشش کر رہی ہے،پتا نہیں را ؤانوار اسلام آباد ائرپورٹ سے کیسے چلے گئے؟ بدھ کے روز چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول زرداری نے لاہور میں عاصمہ جہانگیر کے لواحقین سے ان کی وفات پر تعزیت کی۔اس موقع پر عاصمہ جہانگیر کی رہائش گاہ کے باہر میڈیا سے گفتگومیں بلاول زرداری نے کہا کہ عاصمہ جہانگیر تمام افراد کے لیے یکساں ماحول چاہتی تھیں اور ترقی پسند پاکستان کی حامی تھیں۔بلاول زرداری نے کہا کہ جانتے ہیں کہ پارلیمنٹ کے پاس کئی اختیارات ہیں اور ہم انتخابی اصلاحات بھی چاہتے ہیں لیکن نواز شریف کے ارادوں پر شک ہے۔ کوئی بھی تنہا عدالتی اصلاحات نہیں کر سکتا، اس کے لیے مل کر بیٹھنا ہوگا،ن لیگ عدالتوں کو ڈکٹیٹ کرنا چاہتی ہے، شہباز شریف اور سیف الرحمن نے ججز کو دھمکیاں دیں، ہم عدالتوں کو دھمکیاں دینے کی بھرپورمذمت کرتے ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم کہ راؤانوار کہاں ہیں لیکن سندھ حکومت راؤ انوار کی گرفتاری کے لیے کوشش کر رہی ہے،پتا نہیں راؤانوار اسلام آباد ائرپورٹ سے کیسے چلے گئے؟ بلاول زرداری نے کہا کہ نوازشریف کا اپوزیشن کا کردارادا کرنا کسی طور جائز نہیں ہے، وفاقی حکومت رونا دھونا بند کرے اور اپنا کام کرے۔دریں اثنا پاکستان پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر اور سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے بدھ کی شام عدالت عظمیٰ کی طرف سے نااہل شخص کو پارٹی قیادت کے لیے نااہل قرار دینے کے فیصلے پراپنے رد عمل میں کہا ہے کہ نا اہل شخص کو پارٹی قیادت کا کوئی حق نہیں، عدالت عظمیٰ کا فیصلہ سب کو ماننا ہوگا۔ فیصلے سے انکار کا مطلب جمہوریت کی اہمیت کو کم کرنا ہوگا، بد قسمتی سے نواز شریف نے ٹکراؤ کا راستہ چنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اعلیٰ ترین عدالت نے جو فیصلہ دیا ہے ہم سب پر لازم ہے کہ اس فیصلے کا احترام کریں۔ ریاست کے اداروں سے ٹکراؤ کا کسی کو کوفائدہ نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ایسے اقدامات سے گریز کرنا چاہیے جس سے جمہوریت کی اہمیت کم ہو تی ہو ۔
لاہور: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول عاصمہ جہانگیر کے اہل خانہ سے تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں