راؤ انوار کے معاملے پر عدالت عظمٰی کے احکامات پر عمل کرینگے ، وزیر اعلٰی سندھ

50
سیہون: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں
سیہون: وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں

حیدر آباد/سیہون (آئی این پی ) وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ راؤ انوار کے معاملے پر عدالت عظمیٰ کے احکامات کو مانیں گے،خواہش ہے ایم کیو ایم اپنے اختلافات ختم کرے اور مل کر کام کریں،پارٹی کا کہنا ہے کہ الیکشن سے قبل کسی سے اتحاد نہیں کرنا ، سیہون خودکش حملے کے کیس کو مکمل طور پر حل کر لیا گیا ہے اور سیہون شریف دھماکے اور خودکش حملے کے ماسٹر مائنڈ سمیت تمام ملزمان گرفتار اور جہنم رسیدہو چکے ہیں۔ وہ سیہون شریف میں حضرت لعل شہباز قلندر کی درگاہ پرہونے والے خودکش حملے کے شہداء کی پہلی برسی کے موقع پر درگاہ پرچادرچڑھانے اور فاتحہ خوانی کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو
کررہے تھے۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ صاف پانی کا ایشو ہے تاہم عدالت عظمیٰ کے احکامات پر پلانٹ ایک سے دوسرے محکمے میں ٹرانسفر ہوئے جبکہ را ؤانوار کے معاملے پر عدالت عظمیٰ کے احکامات مانیں گے۔ انہوں نے کہا میری خواہش ہے ایم کیو ایم اپنے اختلافات ختم کرکے مل کر کام کرے، پارٹی کا کہنا ہے کہ الیکشن سے قبل کسی سے اتحاد نہیں کرنا جبکہ ہارس ٹریڈنگ کی بات کرنے والے اپنے ہی سینیٹر پر شک کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سہیون واقعے کے بعد درگاہ کی سیکورٹی کو مزید بہتراور فول پروف بنایاگیا ہے تاکہ دوبارہ کوئی بھی ناخوشگوار واقعہ رونما ناہو اس کے علاوہ سندھ کی تمام درگاہوں پر بھی سیکورٹی کو مزیدسخت کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سندھ صوفیوں کی دھرتی ہے اور ہمیشہ سے امن کا گہوارا رہی ہے ۔وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ ملک کے خلاف کام کرنے والے دہشت گردعناصر کے پاس وسائل بہت زیادہ ہیں جبکہ ہم اپنے محدود وسائل کے ساتھ سیکورٹی کے بہترین انتظامات یقینی بنا نے کی ہرممکن کوشش کررہے ہیں۔ بعد ازاں منچھر جھیل کے دورے کے موقع پر انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ منچھر جھیل کی ازسرنوبحالی کے لیے ایک اسکیم بنائی گئی ہے جس پر منظوری کے بعدبلاتاخیر عملدرآمد کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جھیل کے اطراف رہائش پذیر ممکنہ متاثرین کو ہرممکن ریلیف دیا جائے گا۔بعد ازاں وزیر اعلیٰ سندھ نے کرمپور میں علی اکبر اوٹھو کی والدہ ،وڈیرو شبیر اوٹھو کے بھائی جان محمد اوٹھوکی وفات پرتعزیت کی جبکہ گاؤں اراضی میں سید اعجاز شاہ کی والدہ کی وفات پر بھی تعزیت کی جس کے بعد وزیر اعلیٰ سندھ نے واہڑ میں اپنے والدین کے مزار پر حاضری دی اور فاتحہ خوانی کرکے دعا کی ۔