مبینہ روسی مداخلت‘ ٹرمپ کےسابق مشیر سے 20 گھنٹے پوچھ گچھ

105

واشنگٹن (انٹرنیشنل ڈیسک)امریکا کے صدراتی انتخابات میں روس کی مبینہ مداخلت کی تحقیقات کرنے والے خصوصی کونسل رابرٹ میولر کی ٹیم نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سابق چیف اسٹریٹجسٹ اسٹیو بینن سے 20 گھنٹے تک پوچھ گچھ کی ہے۔ اسٹیو بینن نے رواں ہفتے 2 بار رابرٹ میولر کی ٹیم کے سامنے پیش ہو کر سوالوں کے جوابات دیے۔ واضح رہے کہ امریکی سینیٹ، ایوان نمایندگان اور خصوصی کونسل مل کر صدارتی انتخاب میں مبینہ روسی مداخلت کی تحقیقات کر رہے ہیں۔ اسٹیو بینن اس سے پہلے بھی ایوان نمایندگان کی خصوصی کمیٹی کے سامنے پیش ہو چکے ہیں لیکن انہوں نے وہاں یہ کہہ کر سوالوں کے جوابات دینے سے انکار کیا تھا کہ انہیں وائٹ ہاؤس نے ایک انتظامی حکم کے ذریعے کسی قسم کی معلومات کمیٹی کو دینے سے منع کر رکھا ہے۔ اسٹیو بین صدر ٹرمپ کی انتخابی مہم کے چیئرمین تھے اور انتخابات میں کامیابی کے بعد صدر ٹرمپ نے انہیں وائٹ ہاؤس میں چیف اسٹریٹیجسٹ کے عہدے پر تعینات کیا تھا۔ اسٹیو بین انتہائی دائیں بازو کے خیال کے حامل شخص ہیں اور انہوں نے ہی صدر ٹرمپ کی امریکا سب سے پہلے کی مہم بنانے میں مدد کی تھی۔
ٹرمپ مشیر؍ تفتیش