حکمرانوں نے امریکا سے بطور غلام تعلقات بنا رکھے ہیں،فضل الرحمن

155
بنوں: جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن سیرت کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں
بنوں: جے یو آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن سیرت کانفرنس سے خطاب کررہے ہیں

بنوں (آن لائن)جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ ہمارے حکمرانوں نے امریکاکے ساتھ بطور غلام تعلقات بنائے ہیں ۔ان کے بقول قرآن کی تعلیمات اور آقا ؐ کی سیرت کا تقاضا ہے کہ ہمیں ہر قسم کی غلامی سے نکلنا ہوگا۔بنوں میں سیرت المصطفیٰ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ اگر کوئی مغربی تہذیب پاکستان میں اور خصوصا خیبر پختونخوا میں قائم کرنا چاہے تو سب سے پہلے جمعیت علماء اسلام
سیسہ پلائی ہوئی دیوار بنے گی ۔انہوں نے کہا کہ میں جانتا ہوں کہ کتنے پیسے آئے اور کہاں سے آئے گزشتہ انتخابات کے بعد مجھے کہا گیا تھا کہ مولانا فضل الرحمن آرام سے بیٹھ جاؤ پیسہ آیا ہے جو گلی ،کوچوں ،مدارس اور علماء کو دیا جائے گا پھر آپ کے ساتھ کوئی نہیں ہوگا ،مگر ہم نے وہ پیسے مسترد کیے کہ ہم ایسے پیسوں کا حصہ نہیں بنیں گے ۔فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ مغربی ممالک پاکستان میں اسلامی تہذیب کا خاتمہ چاہتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ فاٹا علاقہ جات معدنیات اور ذخائر سے بھرے پڑے ہیں ، پوری دنیا کی نظریں ان وسائل پر ہیں، اس لیے ہی فاٹاانضمام کا مسئلہ اُٹھایا گیا ہے، جوعوام کے فائدے کے لیے نہیں ، اندر کی بات ہم جانتے ہیں، یہ بات ہر کوئی سن لے کہ ہم کسی کی ملکیت پر ڈاکا ڈالنے نہیں دیں گے۔