نوازشریف اور اسفندیارولی کی عدلیہ مخالف تقاریر پر لاہورپولیس کو نوٹس

303

لاہور (آن لائن) ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج فیاض بٹر نے ایبٹ آباد جلسے میں عدلیہ مخالف تقریر کرنے پر سابق وزیر اعظم نواز شریف اور اے این پی کے سربراہ اسفند یار ولی کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست پر ایس ایچ او تھانہ ماڈل ٹاؤن کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 29 نومبر تک جواب طلب کر لیا۔ تحریک انصاف کی رہنما تنزیلہ عمران کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ نواز شریف اور اسفند یار ولی نے ایبٹ آباد جلسے میں عدلیہ مخالف تقاریر کیں، دونوں سیاست دانوں نے عوام کو ملکی اداروں کے خلاف اکسانے کی کوشش کی، عدلیہ کے خلاف نفرت پر مبنی ان کی تقاریر غداری کے زمرے میں آتی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ تھانہ ماڈل ٹاؤن کو دونوں سیاست دانوں کے خلاف غداری کا مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی مگر پولیس کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں کی گئی، جس پر عدالت نے ایس ایچ او تھانہ ماڈل ٹاؤن کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 29 نومبر تک جواب طلب کر لیا۔