منی لانڈرنگ کیس: این ٹی ایس کے ڈائریکٹر ہارون رشید کے وارنٹ

262

راولپنڈی (نمائندہ جسارت) کسٹم راولپنڈی کی خصوصی عدالت کے جج شیراز کیانی نے 2 ارب روپے سے زائدکی منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری کے مقدمے میں نیشنل ٹیسٹنگ سروس (این ٹی ایس) کے ڈائریکٹر ہارون الرشید کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے جبکہ شریک جرم 5 ملزمان کو مقدمے کی نقول جاری کرتے ہوئے سماعت13جنوری تک ملتوی کر دی ہے‘ آئندہ تاریخ پر ملزمان پر فرد جرم عاید کی جائے گی‘ منگل کو سماعت کے موقع پر این ٹی ایس کے ڈائریکٹر ہارون الرشید عدالت میں پیش نہیں ہوئے جبکہ دیگر ملزمان ڈاکٹر محمد جنید، اظہار حسین، محمد سہیل غنی، ڈاکٹر شاہد خان اور ڈاکٹر شیرازعدالت میں موجود تھے جو پہلے ہی ضمانت پر رہا ہیں‘ عدالت نے موجود ملزمان میں مقدمے کی نقول تقسیم کرتے ہوئے فرد جرم عاید کرنے کے لیے سماعت 13جنوری تک ملتوی کر دی جبکہ ڈاکٹر ہارون کے وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ ملزم کو گرفتار کر کے عدالت میں پیش کیا جائے‘ مذکورہ تمام ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے5 بینک اکاؤنٹس چھپائے اور جعلی بیان حلفی جمع کرا ئے اس طرح ادارے میں منی لانڈرنگ اور ٹیکس چوری کا ارتکاب کر کے نہ صرف قومی خزانے کو2 ارب 2 کروڑ54 لاکھ روپے سے زائد کا نقصان پہنچایا گیا بلکہ سیکڑوں طالب علموں کے مستقبل کے ساتھ کھیلا گیا۔ یاد رہے کہ رواں ماہ کے پہلے عشرے میں ایف بی آر نے این ٹی ایس کے دفتر پر چھاپا مار کر 5 سالہ ریکارڈ اور بینک اکاؤنٹس کا ڈیٹا قبضے میں لیا تھا۔