کلبھوشن کیس: تصدق جیلانی عالمی عدالت میں ایڈہاک جج نامزد

285

اسلام آباد (صباح نیوز) پاکستان نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کیس میں سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی کو عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج نامزد کر دیا ہے۔ پاکستان کلبھوشن کے حوالے سے اپنا تفصیلی جواب 17 دسمبر تک عالمی عدالت انصاف کو بھجوائے گا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کا کہنا ہے کہ اس وقت عالمی عدالت انصاف میں پاکستان کا کوئی جج نہیں جبکہ بھارتی جج بھنڈاری عالمی عدالت انصاف میں جج کی حیثیت سے موجود ہیں۔ ایڈہاک جج کے اختیارات بھی دوسرے ججز کے برابر ہوتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق عالمی عدالت انصاف نے بھارت کو آگاہ کر دیا ہے کہ پاکستان نے سابق چیف جسٹس تصدق جیلانی کو یادیو کیس میں اپنا ایڈہاک جج مقرر کیا ہے۔ علاوہ ازیں پیر کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اشتر اوصاف نے کہا کہ عام انتخابات بروقت نہ کرائے گئے یا نئی حلقہ بندیوں سے قبل کرانے کی کوشش کی گئی تو ان کی کوئی آئینی حیثیت نہیں ہوگی۔ اٹارنی جنرل آف پاکستان اشتر اوصاف علی نے کہا ہے کہ وزیراعظم مکمل بااختیار ہیں، وہ کسی کے اشاروں پر کام نہیں کر رہے۔ صدر مملکت کی جانب سے اسمبلیاں توڑنے یا کسی کی سزا معاف کرنے کا اختیار وزیراعظم اور کابینہ کی سفارش سے مشروط ہے۔ سی پیک کے منصوبوں میں تاخیر سے چین میں بے چینی پائی جارہی ہے۔ اورنج ٹرین منصوبہ تاخیر کا شکار ہونے سے اس کی لاگت میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے۔