پاکستان مشین ٹول فیکٹری ملازمین کو واجبات ادا کرے،عبدالسلام

198

PMTF۔ پاکستان مشین ٹول فیکٹری ریٹائرڈ ورکرز ایکشن کمیٹی کے زیر اہتمام PMTF گیٹ لانڈھی میں 14 نومبر کو صبح 10 بجے بقایا جات کی ادائیگی کے لیے مظاہرہ کیا گیا۔ اس موقع پر نیشنل لیبر فیڈریشن کراچی کے صدر عبدالسلام نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ حکمران پاکستان مشین ٹول فیکٹری کے ملازمین کو 9 سال رکے ہوئے واجبات دلوائیں۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد کی طاقت سے پریشان حال مزدور اپنے حقوق حاصل کرسکتے ہیں۔ انہوں نے
کہا کہ PMTF میں کنٹریکٹ ورکرز 36 سال سے کام کررہے ہیں لیکن وہ بھی قانونی حقوق سے محروم ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے کے نتیجے میں کنٹریکٹ ورکرز کو بھی وہی قانونی مراعات دی جائیں جو مستقل ملازمین کو دی جاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل لیبر فیڈریشن PMTF ریٹائرڈ ملازمین کی آواز سینیٹ اور قومی اسمبلی میں اٹھائے گی۔ NLF
کراچی کے جنرل سیکرٹری قاسم جمال نے کہا کہ جدوجہد ضرور رنگ لائے گی۔ قبل ازیں ایکشن کمیٹی کے کنوینر خالق داد نیازی، نثار احمد، محمد آصف، محمد شفیق اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریٹائرڈ ملازمین کو بقایا جات نہ ملنے کی وجہ سے مزدور فاقہ کشی سے دوچار ہیں۔ اس عرصے میں 50 مزدور انتقال کرگئے، بہت سے گھرانوں میں رقم نہ ہونے کی وجہ سے بیٹیوں کی شادی نہ ہوسکی۔ انہوں نے کہا کہ PMTF منافع میں ہونے کے باوجود ملازمین کو واجبات ادا نہ کرکے پریشان حال مزدوروں پر ظلم کررہی ہے۔ اس موقع پر مزدور اپنے مطالبات کے حق میں شدید نعرے بازی کررہے تھے۔ انہوں نے نیشنل لیبر فیڈریشن اور جماعت اسلامی زندہ باد کے نعرے لگائے۔ مظاہرین سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے اٹلس انجینئرنگ کے مزدور رہنما نصیر الدین بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ مزدوروں کی جدوجہد میں وہ بھرپور تعاون کریں گے۔