وطن عزیز کو سلطنت شریفہ میں بدل دیا گیا،عباس کمیلی

238
مجلس وحدت المسلمین اور آئی ایس او کے کارکنان ناصر عباس شیرازی کی رہائی کیلیے مظاہرہ کر رہے ہیں (فوٹو: جسارت)
مجلس وحدت المسلمین اور آئی ایس او کے کارکنان ناصر عباس شیرازی کی رہائی کیلیے مظاہرہ کر رہے ہیں (فوٹو: جسارت)

کراچی(اسٹاف رپورٹر)مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی رہنما اور آئی ایس او پاکستان کے رکن مرکزی نظارت سید ناصر شیرازی ایڈووکیٹ کی عدم بازیابی کے خلاف اتوار کو کراچی پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس سے خطاب میں جعفریہ الائنس کے سربراہ علامہ عباس کمیلی و دیگر نے کہا کہ وطن عزیز کو سلطنت شریفہ میں بدل دیا گیا، ناصر شیرازی کو بازیاب کرایا جائے۔مظاہرے میں جعفریہ الائنس کے سربراہ علامہ عباس کمیلی،مجلس علمائے شیعہ پاکستان کے سربراہ علامہ مرزا یوسف حسین،آئی ایس او کے صدر یاسین اورایم ڈبلیو ایم کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علامہ احمد اقبال رضوی سمیت مختلف مذہبی جماعتوں کے رہنماؤں اور کارکنوں نے شرکت کی۔شرکا نے ناصر شیرازی کی عدم بازیابی کے خلاف زبردست نعرے بازی بھی کی۔مقررین نے کہا کہ ایک ملک گیر سیاسی و مذہبی جماعت کے سینئر رہنما کو20روز قبل اغوا کرایا گیا اورآج بھی وہ غیر قانونی قید میں ہیں، ملک میں جنگل کاقانون ہے،شریف خاندان نے وطن عزیز کو سلطنت شریفہ میں بدل دیا ہے،عدالتی احکامات کے باوجود ناصر شیرازی کی بازیابی کو پولیس انتظامیہ نے جان بوجھ کر معمہ بنایا ہوا ہے۔