پاک پلاس ایکسپو2019 کراچی ایکسپو سینٹر میں18مارچ سے شروع ہو گی،

102

کراچی (اسٹا ف رپورٹر)پاکستان پلاسٹک مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن کے تحت 5ویں پاک پلاس ایکسپو2019 کراچی ایکسپو سینٹر میں18مارچ سے شروع ہو رہی ہے ۔ تین روزہ نمائش 20مارچ تک جاری رہے گی نمائش میں چین کی معروف کمپنیو ں سمیت ایران ،انڈونیشیا اور ملائیشیا کے وفود بھی شرکت کر رہے ہیں ،

امکان ہے کہ نمائش کا افتتاح گورنر سندھ عمران اسماعیل کریں گے ،پاک پلاس ایکسپو میں پلاسٹک کی جدید سائیکلنگ پلانٹ بھی متعارف کرایا جائے گا جبکہ پہلی مرتبہ پلاسٹک کی مشہور پاکستانی مصنوعات کمپنی قیمت پر فروخت کیلئے پیش کی جائے گی ۔

نمائش کا ایونٹ منیجر پرائم ریلیشن ہے ۔نمائش کے منتظمین کے مطابق 5ویں پاک پلاس نمائش ایکسپو سینٹر کے ہال4,5,6 ہالز پر مشتمل ہو گی۔ ہال نمبر4میں پاکستان کی نامور پلاسٹک کمپنیوں کی مصنوعات فیکٹری پرائس پر دستیاب ہو گی جبکہ ہال نمبر5میں چین کی پلاسٹک مصنوعات تیار کرنیوالی مشینریز کے14اسٹالز لاگئے جائیں گے ،

اور ہال 6میں پلاسٹک خام مال ،کیمیکل اور پلاسٹک مٹریل کیلئے مختص ہو گا ۔ پاکستان پلاسٹک مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن کے پیٹرن انچیف ذکریا عثمان ،چیئرمین شکیل احمد سمیت فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداروں سمیت اہم کاروباری شخصیات نمائش کا دورہ کریں گی ۔ 

منتظمین کا کہنا تھا کہ اس نمائش میں پہلی مرتبہ چین کی ایڈوانس جدید ٹیکنالوجی کی حامل مشینیں پاکستان کی پلاسٹک انڈسٹری سے وابستہ افراد کیلئے دلچسپی کا سبب بنیں گی ۔منتظمین کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں مصنوعات کی تیار ی میں پلاسٹک کا استعمال بڑھ رہا ہے جس کی لاگت میٹریل کے مقابلے انتہائی کم ہے مگر پاکستان میں آگہی کی کمی کی وجہ سے اس کا استعمال دنیا کے مقابلے کم ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان کی مارکیٹ ایران اور چین سے بڑی ہے اور شعبے میں ترقی کی گنجائش بہت زیادہ ہے ۔ایک جائزہ رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں پلاسٹک کی فی کس کھپت100کلو گرام سے140کلو گرام سالانہ ہے جاپان میں120کلو گرام، بھارت میں14کلو گرام جبکہ پاکستان میں کھپت صرف7کلو گرام سالانہ ہے ۔

پاکستان میں محفوظ پلاسٹک کے عمل دخل کو بڑھا کر نہ صرف عوام کو سستی مصنوعات فراہم کی جا سکتی ہے بلکہ اس انڈسٹری کو بھی فروغ دیا جا سکتا ہے ۔