عمران خان کشمیر پر عالمی دباؤ کے سامنے سرنڈر نہ کریں،لیاقت بلوچ

86
لاہور: جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ اور نائب امیر راشد نسیم منصورہ میں تربیتی اجتماع سے خطاب کررہے ہیں
لاہور: جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ اور نائب امیر راشد نسیم منصورہ میں تربیتی اجتماع سے خطاب کررہے ہیں

لاہور(نمائندہ جسارت)جماعت اسلامی اور ملی یکجہتی کونسل کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان عالمی دباؤ کے سامنے سرنڈر نہ کریں کشمیر کا سودا اور اسرائیل کو تسلیم کرناعوام کے لیے قابل قبول نہیں ہوگا، بھارت سے ہمیشہ خطرہ موجود رہے گا ، پاکستان کو ہی مستقل بنیادوں پر مسئلہ کشمیر ،بھارت سے تعلقات کاراور خطے میں بقائے کار کے اصولوں پر مستقل پالیسی اور حکمت عملی بنانا ہوگی،اندرون ملک سیاسی جمہوری قوتوں میں جو بھی اختلاف ہوں لیکن قومی سلامتی کے تحفظ اور پاکستان کے جغرافیائی اور نظریاتی دشمنوں کے مقابلے میں سیاست اور ریاست کو یک جاں و یک زباں رہنا ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں جاری مرکزی تربیت گاہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ نظریاتی ،اسلامی تہذیب ، اسلامی قوانین کے تحفظ کے لیے جماعت اسلامی تمام دینی جماعتوں کو متحد رکھنے کے لیے کلیدی کردار اداکرتی رہے گی،سیاسی اور انتخابی محاذ پر جماعت اسلامی کے کارکنان میں اپنی دعوت ،شناخت،کلمے والے پرچم اور ترازو نشان پر کامل یکسوئی ہے ۔تحفظ پاکستان ،رابطہ عوام مہم میں کارکنان پرجوش ایمانی جذبوں کے ساتھ 50 لاکھ گھروں ،دکانوں ،ڈیروں ،درباروں ،تجارتی اور صنعتی اداروں پر دستک دیں گے اور 3 کروڑ مرد وخواتین ،طلبہ نوجوان ،مزدوروں اور کسانوں تک جماعت اسلامی کے پیغام کو پہنچائیں گے ۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ افغانستان مستقبل کے منظر میں ایک بار پھر جوہری میدان ہے ، عالمی استعماری قوتوں ،ہندویہود کی سازشوں سے ہوشیار رہا جائے ،افغانستان افغانیوں،کشمیر کشمیریوں اور فلسطین فلسطینیوں کا ہے،وزیر اعظم عمران خان عالمی دباؤ کے سامنے سرنڈر نہ کریں کشمیر کا سودا اور اسرائیل کو تسلیم کرناعوام کے لیے قابل قبول نہیں ہوگا ،ایک سوال کے جواب میں لیاقت بلوچ نے کہاکہ حکومت کاتکبر اور تہذیب کے دائروں سے ہٹنا غیر حکیمانہ عمل ہے جو اپوزیشن کو متحد کر رہاہے۔