خواتین کے وراثتی حق کیلیے ھبہ قوانین میں ترامیم زیر غور ہیں، صدر مملکت

117
اسلام آباد: صدر عارف علوی عالمی یوم خواتین کے موقع پر سیمینار سے خطاب کررہے ہیں
اسلام آباد: صدر عارف علوی عالمی یوم خواتین کے موقع پر سیمینار سے خطاب کررہے ہیں

اسلام آباد (اے پی پی) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ خواتین کے وراثتی حقوق کے تحفظ کے لیے ھبہ قوانین میں ترامیم زیر غور ہیں، اسلام میں خواتین کو وراثت میں ہر طرح کے حقوق حاصل ہیں، اسلام نے خواتین اور بچوں کے حقوق کی خصوصی تلقین کی ہے۔ انہوں نے یہ بات جمعرات کو ایوان صدر میں ویمن پارلیمانی کاکس کے زیراہتمام خواتین کے عالمی دن کے حوالے سے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ صدر مملکت نے کہا کہ مذکورہ ترمیم خواتین کو اپنے وراثتی حق کے حصول میں معاون ہو گی ،صدر نے خواتین ارکان پارلیمان پر زور دیا کہ وہ خواتین کے مسائل بالخصوص تعلیم و صحت کی سہولیات کے فقدان کے حوالے سے ویمن پارلیمانی کاکس کو بروئے کار لائیں۔ میری والدہ اور اہلیہ نے ان کی زندگی کو مثبت سمت پر گامزن رکھنے میں مدد دی۔ انہوں نے کہا کہ آج تعلیمی اداروں میں 80 فیصد لڑکیاں تعلیم حاصل کر رہی ہیں، خواتین نے مختلف شعبوں میں اپنی کارکردگی سے ترقی حاصل کی۔ خاتون اول بیگم ثمینہ علوی نے کہا کہ ویمن پارلیمانی کاکس محترمہ فاطمہ جناح، رعنا لیاقت علی خان اور بے نظیر بھٹو کے وژن کی روشنی میں کام کر رہا ہے۔خواتین سیاست میں بھرپور شرکت کریں۔ وفاقی وزیر بین الصوبائی رابطہ اور سابق اسپیکر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا نے کہا کہ خواتین ارکان پارلیمان کو معاشرے میں اپنا فعال کردار ادا کرنا چاہیے اور دیگر خواتین کے لیے رول ماڈل بننا چاہیے۔